ایران سے متعلق مسائل کو پُر امن طریقوں سے حل کرنا ہوگا: جرمنی

تہران، 25 مئی، ارنا- جرمن حکومت نے امریکی وزیر خارجہ کے عنقریب دورہ برلن کے موقع پر ایران اور امریکہ کے درمیان حالیہ کشیدگی کو پر امن طریقوں سے حل کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

رپورٹ کے مطابق، جرمن حکومت کی ترجمان "مارتینا فیتس" نے کہا کہ ایران اور امریکہ کے درمیان جوہری معاہدے سے متعلق حالیہ کشیدگی اور علاقے میں ایران کا کردار وہ مسائل ہیں جن پر امریکی وزیر خارجہ "مائیک پمپیو" اپنے آئندہ دورہ برلن کے موقع پر جرمن حکام کیساتھ تبادلہ خیال کریں گے۔ مائیک پمپیو 13 مئی کو جرمنی کا دورہ کریں گے۔


انہوں نے مزید کہا کہ جرمن حکومت کا عقیدہ ہے کہ ایران سے متعلق سارے مسائل کو پر امن طریقے اور صرف مذاکرات کے ذریعے حل کیا جا سکتا ہے۔


یہ بات قابل ذکر ہے کہ جرمن چانسلر "آنجیلا میرکل" نے بھی امریکی وزیر خارجہ کیساتھ اپنی حالیہ ملاقات میں اس بات پر زور دیا تھا۔


واضح رہے کہ امریکی وزیر خارجہ نے گزشتہ ہفتوں میں اپنے دورہ جرمنی کو منسوخ کرتے ہوئےعراق کا دورہ کیا تھا۔


یاد رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے 5 مئی 2018 کو ایران جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کے بعد ایران کیخلاف امریکی پابندیوں کے نئے دور کا اغاز کیا۔


ایران جوہری معاہدے کے دیگر فریقین بشمول جرمنی، امریکہ کے اس اقدام کے مخالف تھے۔


 اس کے علاوہ جرمن محکمہ خارجہ کے ڈائریکٹر برائے سیاسی امو "ینس پلوتر" اور ایران میں تعینات جرمنی کے سفیر "کلور برشتولد" نے گزشتہ جمعرات کو نائب ایرانی وزیر خارجہ "سید عباس عراقچی" کیساتھ ایک ملاقات میں ایران جوہری معاہدے کے تحفظ پر زور دیا۔


9467**


ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 0 =