ایرانی مندوب نے امریکہ سے مذاکرات میں رکاوٹوں پر روشنی ڈالی

نیویارک، ۲۵ مئی، ارنا – اقوام متحدہ میں تعینات ایرانی مستقل مندوب نے واشنگٹن پوسٹ اخبار میں ایک شائع ہونے والے مضمون میں امریکہ کے ساته مذاکرات کی رکاوٹوں کی وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹرمپ کے بیانات نے ثابت کردیا کہ وہ اسلامی جمہوریہ ایران پر خلل ڈالنے کے عزم کا اعادہ کررہا ہے.

مجید تخت روانچی نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے ساته مذاکرات کے لئے امریکی تجویز میں تین رکاوٹیں موجود ہیں:
پہلی رکاوٹ: تاریخ سے پتہ چلتا ہے کہ دهمکی، تشدد اور پابندیوں کی مبنی پر حقیقی اور تعمیری مذاکرات نہیں کئے جا سکتے ہیں۔ جب فریقین باہمی احترام کے اصول پر عمل کریں اور ایک موقف پر پابند رہیں تو وہ مذاکرات کامیاب ہوسکیں گے.
دوسری رکاوٹ: ٹرمپ کی حکومت اسلامی جمہوریہ ایران کے ساته مذاکرات کی ضروت پر بات چیت نہیں کر رہی ہے۔ تنازعت پر دلچسبی رکهنے والے ممالک تعمیری اور عمدہ مذاکرات کو روکنے کے لئے کاروائی کر رہے ہیں.
تیسری رکاوٹ: ایک سال سے پہلے ٹرمپ کی جانب سے کسی وجہ کے بغیر عالمی جوہری معاہدے کی علیحدگی آئندہ میں کوئی تعلقات قائم رکهنے کی تشویش کا باعث بن گئی کیونکہ گزشتہ مسائل کی تکرار ممکن ہے.
۲۷۴*۹۳۹۳**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 1 =