خلیج فارس میں کشیدگی عالمی معیشت پر منفی اثر پڑے گی: چین

بیجنگ، 22 مئی، ارنا – چین نے کہا ہے کہ خلیج فارس میں کشیدگی کسی کے فائدے میں نہیں بلکہ اس سے عالمی معیشت اور سلامتی پر منفی اثرات مرتب ہوں گے.

یہ بات "لوکانگ" نے منگل کے روز صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
اس موقع پر انہوں نے اسلامی جمہوریہ ایران اور امریکہ کے درمیان تنازعات پر چین کے موقف کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہم یقین رکھتے ہیں کہ جنگ اور کشیدگی مناسب راستہ نہیں بلکہ مذاکرات اور گفتگو سب سے واحد حل ہے.
لوکانگ نے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ فریقین تنازعات کی کمی کے لئے بھرپور کوشش اور تمام مسائل کو حل کریں.ہم موجودہ مسائل کے خاتمے کے لئے کوشش کر رہے ہیں.
انہوں نے ایرانی وزیر خارجہ کے حالیہ دورہ چین پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ چینی اور ایرانی وزرائے خارجہ نے جوہری معاہدے پر تبادلہ خیال کیا.
انہوں نے مزید کہا کہ چین کا موقف بالکل واضح ہے، اسلامی جمہوریہ ایران اور چین کے درمیان اقتصادی اور تجارتی تعلقات قانونی ہے اور کوئی بھی اسے روک نہیں سکتا.
274*9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@