ایران، جوہری معاہدے کے عین مطابق کام کررہا ہے: روس

ماسکو، 21 مئی، ارنا - روس نے جوہری معاہدے کے تحت ایرانی کارکردگی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے اس معاہدے سے ہٹ کر کوئی قدم نہیں اٹھایا.

یہ بات بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی میں تعینات روسی مندوب "میخائل ایوانووچ یولیانوف" نے نیوز ایجنسی ریانوستی سے گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران نے رواں مہینے میں جوہری معاہدے کے بعض حصوں پر عمل درآمد کو روک دیا جبکہ معاہدے کی شرائط کے تحت اسے یہ حق حاصل تھا جبکہ یہ ابھی تک جوہری معاہدے سے علیحدہ نہیں ہوا.
روسی نمائندے کے مطابق، ایران نے جوہری معاہدے کی کوئی خلاف ورزی نہیں کی بلکہ قوانین کے مطابق ایران تین سو کلوگرام افزودہ یورینیم اور 130 کلوگرام ہیوی واٹر کا ذخیرہ رکھ سکتا ہے اور یہ تمام اقدامات جوہری معاہدے کے عین مطابق ہیں.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران بڑی ذمہ داری کے ساتھ اپنا کردار ادا کررہا ہے اور اس کی بدولت جوہری معاہدہ اب بھی جاری ہے.
روسی مندوب کا کہنا تھا کہ ہم کشیدگی نہیں چاہتے مگر جوہری معاہدے سے متعلق کوئی بھی مستقبل کا فیصلہ ایران پر منحصر ہے تاہم اس کے اقدامات عالمی جوہری ادارے کے اصولوں کے منافی نہیں.

9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@