ایران اور چین کے درمیان تعلیمی تعاون میں اضافہ ہوگا: چینی پروفیسر

بیجنگ، 21 مئی، ارنا- بیجنگ آرکیٹیکچرل کالج کے سربراہ نے ایران اور چین کے درمیان سیاسی اور معاشی تعلقات کے فروغ کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک کیخلاف امریکی دباؤ میں اضافے کے تناظر میں ایران اور چین کو تعلیم اور آرٹس کے شعبوں میں باہمی تعاون کو بڑھانا ہوگا۔

پروفیسر "جانگ ای لینگ" نے منگل کے روز ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ شاہرا ہ ریشم منصوبہ ایران اور پاکستان کے درمیان تعلقات کو مزید مضبوط بنانے میں معاون ثابت ہوگا۔
انہوں نے مزید کہا کہ دونوں ممالک شاہراہ ریشم منصوبے کے فریم روک کے اندر مختلف شعبوں بشمول سیاسی، ثقافتی، معاشی، تجارتی اور آرٹس کے شعبوں میں باہمی تعلقات کو فروغ دے سکتے ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ صورتحال میں جو امریکہ کیجانب سے ایران اور چین کیخلاف دباؤ میں اضافہ ہوتا جار رہا ہے یہ دونوں ملک شاہراہ ریشم منصوبے کے زمینی اور سمندری راستوں کے شعبوں میں مشترکہ مفادات پر مبنی تعمیری تعاون کر سکتے ہیں۔
چینی پروفیسر نے سلک روڈ منصوبے کے فریم ورک کے اندر دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات کی توسیع پر زور دیتے ہوئے کہا کہ جتنے ہی دونوں ملکون کے درمیان تعلقات میں اضافہ ہوجائے اتنے ہی یہ دونوں ممالک ایک دوسرے کے تجربات سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ صورتحال کی تبدیلیوں کی پرواہ کیے بغیر دونوں ملکوں کے درمیان باہمی تعلقات کا فروغ ہوگا۔
چینی پروفیسر نے مزید کہا کہ ثقافت، فن اور معیشت کو باہمی تعلقات سے الگ نہیں کر سکتے ہیں لہذا ہم خصوصی طور پر ان تمام شعبوں میں ایران کیساتھ تعلقات کو فروغ دینے کی کسی بھی کوشش سے دریغ نہیں کریں گے۔
9467**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@