پاکستان کیساتھ سرحدی تعاون میں بہتری آئی ہے: ایرانی کمانڈر

ایلام، 20 مئی، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کی سرحدی پولیس فورس کے کمانڈر نے کہا ہے کہ ایران اور پاکستان کے درمیان سرحدی تعاون میں بہتری آئی ہے.

بریگیڈیئر جنرل «قاسم رضایی» نے صوبے ایلام میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ ایران کے پاکستان اور ترکی کے ساتھ باہمی تعلقات میں فروغ کے باعث سرحدی حوالے سے بھی مشترکہ تعاون کو فروغ ملا ہے.
انہوں نے کہا کہ چین اور روس کے بعد ہمسایہ ملکوں کے ساتھ واقع ہونے سے متعلق دنیا میں ایران کی تیسری پوزیشن ہے، ہماری ہمسایوں کے ساتھ 8755 کلومیٹر طویل سرحدیں ہیں.
بریگیڈیئر جنرل قاسم رضایی نے پاک ایران سرحد پر باڑ لگانے کے عمل کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ اس جیسے موثر اقدامات سے مشترکہ سرحدوں پر دہشتگردوں کی نقل و حرکت کی بندش ہوگی جس سے سرحدی علاقوں کی سلامتی میں بھی بہتری آئے گی.
انہوں نے ایران اور افغانستان کے سرحدی حکام کے درمیان تعاون پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سامراج قوتیں دہشتگرد اور تکفیری عناصر کے ذریعے ان سرحدوں میں بدامنی پھیلانا چاہتی ہیں مگر وطن عزیز کی بہادر فورسز کی موجودگی میں ان تمام سازشوں کو ناکام بنادیا جائے گا.
سنیئر ایرانی کمانڈر نے مزید کہا کہ بدقسمتی سے افغانستان میں منشیات کی پیداوار 9 ہزار ٹن تک پہنچ چکی ہے جس کی اصل وجہ افغانستان میں مغربی ملکوں کی یلغار ہے جبکہ ایران اس لعنت کی روک تھام کےلئے فرنٹ لائن پر لڑ رہا ہے.
274**9393*
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@