تہذیبوں کا مکالمہ، ایرانی عظیم قوم کی سوچ اور منطق کا نتیجہ ہے: ایرانی صدر

تہران، 20 مئی، ارنا – ایرانی صدر مملکت نے کہا ہے کہ بہت کم ممالک ہیں جو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں قوموں کے حق میں 2 قراردادوں پر دستخط کرے جن قراردادوں میں سے ایک ' تہذیبوں کا مکالمہ ہےجو یہ ایرانی عظیم قوم کی سوچ اور منطق کا نتیجہ ہے۔

یہ بات 'حسن روحانی' نے اتوار کے روز طالب علموں اور نوجوانوں کے ایک عظیم اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ 'اس دن میں لوگ کچھ مشکلات کے باوجود اپنے کام کو اچھی طرح سے سرانجام دیا' اور یہ قرارداد اتفاق رائے سے اقوام متحدہ میں منظور اور میرے عزیز دوست 'سید محمد خاتمی' (سابق ایرانی صدر) کی حکومت کے زمانے میں ایران کے نام سے رجسٹرڈ کردیا گیا.
صدر روحانی نے مزید کہا کہ انسانیت کے حق میں دوسری قرارداد 'تشدد اور انتہاپسندی سے پاک دنیا' تھا جو ایران کی گیارہویں حکومت کی بھر پور کوششوں کیساتھ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اس کی منظوری دی گئی.
روحانی نے کہا کہ ہم ایک قوم ہے جو اپنی بات اور منطق کو کرسی پر بیٹھ سکتی ہے اور ہم نے گیارہویں اور بارہویں حکومت میں بہت سے مسائل اور بحرانوں کے باوجود بہت زیادہ کامیابیاں حاصل کیں.
9410*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@