ٹرمپ اور ٹیم "بی" کی باتیں ایک دوسرے سے مختلف ہیں: ظریف

تہران، 18 مئی، ارنا – ایرانی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ ٹیم "بی" اور ڈونلڈ ٹرمپ کی باتیں ایک دوسرے سے مختلف ہیں اور بالکل واضح ہے کہ ان کو الجھن کا شکار ہیں.

یہ بات "محمد جواد ظریف" نے گزشتہ روز اپنے ٹوئٹر پیج میں ٹرمپ کے حالیہ بیانات پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہی.
ٹرمپ نے جمعہ کے روز اپنے ٹوئٹر پیج میں کہا کہ جعلی نیوز میڈیا ایران کے حوالے سے اپنی جھوٹی خبروں کے ساتھ امریکہ پر خلل ڈال رہی ہے اور اس ملک کو الجھن کا شکار اور وہ نہیں جانتا ہے کہ حقیقی خبر کیا ہے؟
اس موقع پر ظریف نے ٹرمپ کے دعوے پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جب ٹیم "بی" بولتی ہے ٹرمپ ایک اور کہتا ہے بالکل واضح رہا ہے کہ امریکہ نہیں جانتا کہ کیا خیال ہے.
انہوں نے کہا کہ ہم گزشتہ صدیوں سے خوب جانتے ہیں کہ کیا کریں مگر امریکہ کو 1953 سے اب تک الجھن کا شکار ہے.
تفصیلات کے مطابق، ٹرمپ نے وائٹ ہاؤس میں ایران پر مختلف خیالوں کے بعد اس حوالے سے خبروں کو جعلی قرار دے دیا.
274*9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@