غیرتیل آمدنی کو تیل کی جگہ لے سکتے ہیں: صدر روحانی

تہران، 15 مئی، ارنا – ایرانی صدر مملکت نے ایرانی تیل اور غیرتیل مصنوعات کی برآمدات کو روکنا اور ملک پر نفسیاتی دباؤ ڈالنے کے لئے امریکہ کے حالیے فیصلے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران غیرتیل آمدنی کو تیل کی جگہ لے سکتا ہے.

ان خیالات کا اظہار "حسن روحانی" ںے گزشتہ رات ایرانی سپریم لیڈر سے ملکی حکام کی ملاقات کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا.
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ امریکی حکام غلطی سوچ کا شکار ہیں جو صرف چند مہینے تک ایرانی بہادر قوم کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کریں گے.
صدر روحانی نے کہا کہ ایرانی قوم، قائد اسلامی انقلاب، حکومت اور پارلیمنٹ دشمنوں کی شکست کا باعث بن گئی اور آج بھی دشمن ہمارے ملک کے خلاف سازش کررہا ہے۔ انہوں نے صبح اپنے بیڑے کو بھیجتے ہوئے رات نمبر فون دیا ہے. البتہ ہمارے پاس ان کے زیادہ نمبر فون موجود ہیں اور کوئی دن وہ ایرانی قوم کے خلاف جرائم کا مرتکب ہوئے ان کا اصلی اور حقیقی فون نمبر ہے.
انہوں نے وائٹ ہاؤس کے حکام کو مخاطب قرار دیتے ہوئے کہا کہ توبہ کرو اور واپس آؤ، راستہ کھلا ہے شاید ایرانی عوام آپ کے تاریخی جرم اور ظلم کو نظر انداز کریں.
ایرانی صدر نے کہا کہ سب دنیا ہمارے عوام کے صبر سے خوب واقف ہیں. عالمی جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کے بعد ہم نے اپنے دوست اور یورپی یونین کو ان کی ذمہ داری کو پورا کرنے کے لئے کافی موقع دیا مگر آج قانونی راستے سے استعمال کرنے کا وقت آگیا ہے اور ہم نے 8 مئی سے جوہری معاہدے کے بعض احکامات پر عمل نہیں کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے اس معاہدے کے فریقین کو بھی 60 دن کا الٹی میٹم دیا ہے تا کہ وہ تیل اور بینکاری شعبوں کے علاوہ دیگر امور سے متعلق اپنے وعدوں پر عمل کریں.
274*9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@