خطے میں مشکوک نقل و حرکت کا مقصد کشیدگی بڑھانا ہے: ظریف

تہران، 14 مئی، ارنا - ایرانی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ خطے میں تخریبی اقدامات اور حالیہ مشکوک نقل و حرکت کا اصل مقصد کشیدگی بڑھانا ہے.

«محمد جواد ظریف» نے نئی دہلی میں اپنی بھارتی ہم منصب سشما سوراج سے ملاقات کی اور اسے تعمیری قرار دیا.
انہوں نے مزید کہا کہ اس ملاقات میں بھارتی وزیر خارجہ کے ساتھ خطے میں مشکوک نقل و حرکت اور امریکی انتظامیہ کے انتہاپسندانہ اقدامات پر بات چیت ہوئی.
ظریف نے کہا کہ ایران نے پہلے سے ہی ایسی نقل و حرکت کی پیشن گوئی کی تھی جس سے خطے میں کشیدگی پیدا ہوگی.
انہوں نے مزید بتایا کہ ان دنوں ہم اپنے قریبی شراکت داروں بشمول روس کو اپنے اقدامات کے حوالے سے اعتماد میں لے رہے ہیں اور انھیں بتا رہے ہیں کہ ایران نے جوہری معاہدے پر من و عن عمل کیا ہے.
محمد جواد ظریف نے کہا کہ بھارتی وزیر خارجہ اور دیگر فریقین کا بھی یہی کہنا ہے کہ ایران کو جوہری معاہدے کے معاشی ثمرات ملنے چاہئیں.
انہوں نے مزید کہا کہ دوطرفہ تجارت، چابہار بندرگاہ، افغانستان اور دہشتگردی کے خلاف مشترکہ اقدامات پر بھی گفتگو ہوئی.
9410٭274٭٭
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@