ناجائز صہیونی ریاست تمام خطی بحرانوں کی جڑ ہے: ایران

تہران، 14 مئی، ارنا – اسلامی جمہوریہ ایران نے یوم نکبۃ کی مناسبت سے فلسطینی قوم سے یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ناجائز صہیونی ریاست عالمی امن و سلامتی کے لئے خطرہ ہے اور یہ تمام علاقائی بحرانوں کی جڑ ہے.

دفترخارجہ کے بیان کے مطابق، 71 سال پہلے فلسطینی سرزمین میں صہیونیوں کی ناجائز وجود کا اعلان کیا گیا جس کی وجہ سے آج علاقائی امن اور عالمی سلامتی کو بڑا خطرہ لاحق ہے.
بیان میں کہا گیا ہے کہ 14 مئی 1948 میں دنیا اور بالخصوص عالم اسلام نے تاریخ کے دردناک ترین واقعے کا سامنا کیا جس کے بعد فلسطینی عوام ہرگز چین اور امن سے زندگی نہ گزار کرسکے.
71 سال پہلے ایک گروہ نے نسل پرستی اور انتہاپسندانہ سوچ کو بنیاد بنا کر فلسطینی سرزمین پر قبضہ جمایا اور یہاں کے باشندوں بشمول مرد، خواتین اور بچوں کا بے دردی سے قتل کا آغاز کیا یا انھیں گھر بار چھوڑنے پر مجبور کیا.
دفترخارجہ نے مزید کہا کہ اس واقعے کو یوم نکبۃ کا نام دیا گیا اور یہ وہ دن ہے جس کے بعد فلسطینی عوام پر بڑے بڑے واقعات ہوئے اور لاکھوں فلسطینیوں کو اپنی ہی سرزمین سے نکالا گیا.
اسلامی جمہوریہ ایران یک بار پھر مظلوم فلسطینیوں سے یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے عالمی برادری بشمول اقوام متحدہ سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ فلسطین پر ناجائز قبضے کا خاتمہ کروا کے فلسطینی قوم کی مدد کریں تا کہ وہ بیت المقدس کو اس سرزمین کا اصل دارالحکومت بناسکے.
بیان کے مطابق، فلسطینی سرزمین میں تمام الہامی ادیان مسلم، عیسائی اور یہودی کے پیروکار بستے ہیں لہذا عالمی برادری کو چاہئے کہ فلسطینیوں سے ان کی آبائی سرزمین کی واپسی کے لئے تعاون کرے.
9410*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@