ایران کا بحیرہ عمان میں کچھ بحری جہاز حادثے کے شکار پر تشویش کا اظہار

تہران، 13 مئی، ارنا – ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے بحیرہ عمان میں کچھ بحری جہاز حادثے کے شکار پر اپنی تشویش اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اس واقعات کی حقیقت کو واضح کرنے پر زور دیا.

"سید عباس موسوی" نے شپنگ کی حفاظت اور سمندری ٹریفک کی سیکورٹی پر اس واقعے کے منفی اثرات کا حوالہ دیتے ہوئے دشمنوں کی جانب سے علاقے کی سلامتی اور استحکام کو درہم و برہم کرنے کی سازشوں کو خبردار کیا.
انہوں نے بیرونی عوامل کی کوئی سازشوں کے سامنے علاقائی ممالک کی ہوشیاری کی ضرورت پر زور دیا.
تفصیلات کے مطابق، اتوار کے روز متحدہ عرب امارات کے مشرقی "فجیرہ" بندرگا میں ایک خوفناک دھماکے پر متنازعہ خبریں شائع کی گئیں جو اماراتی حکام نے اس کی تردید کی مگر اس کے بعد اس ملک کی وزارت خارجہ نے اعلان کردیا کہ چار بحری جہاز اس ملک کے علاقائی پانیوں کے قریب حادثے کا شکار ہوگئے.
فجیرہ بندرگاہ بحیرہ عمان کے کنارے پر اماراتی تیل کی برآمدات کے لئے ایک اہم بندرگاہ ہے جس سے روزانہ ایک ملین و 800 ہزار بیرل تیل برآمد کیا جاتا ہے.
274*9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@