عراق، ایران امریکہ کے درمیان ثالث بنے: عمار حکیم

بغداد، 11 مئی، ارنا – اعلی عراقی سیاستدان عمار حکیم نے بغداد حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ خطے میں کسی بھی نئی جنگ کو روکنے کے لئے ایران اور امریکہ کے درمیان ثالثی کا کردار ادا کرے.

سید عمار حکیم جو عراق کی مشہور سیاسی جماعت تحریک حکمت کے سربراہ بھی ہیں، نے مزید کہا کہ عراق کو چاہئے کہ غیرجانبدار رہنے کے بجائے واسطہ بنے اور خطے میں ممکنہ جنگ کو ٹال دے.
انہوں نے کہا کہ عراق خطے کے مرکز میں واقع ہے، ہم عراق پر ایران اور امریکہ کے درمیان ممکنہ جنگ کے اثرات سے اچھی طرح آگاہ ہیں لہذا ہمیں اپنے ملک کو کسی بھی نئی صف بندی سے دور رکھنا ہوگا.
سید عمار حکیم نے وزیراعظم عراق عادل عبدالمہدی پر زور دیا کہ وہ ایران اور امریکہ کے درمیان مصالحتی کردار ادا کریں تا کہ اس سے تناو اور بحران کا خاتمہ کیا جاسکے دوسری صورت میں اس کے عراق پر منفی اثرات مرتب ہوں گے.
274**9393*
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@