عمران خان پاک ایران گیس منصوبے میں سے امریکی رکاوٹ کا خاتمہ کریں

اسلام آباد، 10 مئی، ارنا - پاکستان کے ایک مشہور اردو اخبار نے وزیراعظم عمران خان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ امریکہ کو قائل کریں کہ پاک ایران گیس منصوبے کے راستے میں رکاوٹ نہ بنے.

روزنامہ «نوائے وقت» کے اداریہ ایران کیساتھ گیس منصوبہ کی تکمیل کی توقعات میں مزید کہا گیا ہے کہ ایران سے متعلق امریکی پابندیوں دوہرے معیار کا شاخصانہ ہے.
اخبار کے مطابق، پاکستان نے پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبہ مکمل کرنے کا فیصلہ کیا ہے. وزیر اعظم عمران خان نے آئی پی منصوبے کے متعلق اہم احکامات جاری کئے ہیں. انہوں نے دفترخارجہ کو ایران کے ساتھ تناؤ ختم کرنے کیلئے اقدامات کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ منصوبے کیلئے ایران کے ساتھ مل کر راہیں تلاش کی جائیں.
نوائے وقت نے مزید کہا کہ ایران کے ساتھ پاکستان کے کئی معاہدے امریکی پابندیوں کے باعث ادھورے پڑے ہیں. امریکہ کا پابندیوں کے حوالے سے دُہرا معیار ہے۔ اس نے کئی ملکوں کو ایران سے تیل خریدنے کی اجازت دیتا تاہم پاکستان کے ایران سے توانائی تعاون کو منفی نگاہ سے دیکھتا ہے.
پاکستان کے ایران کے ساتھ زیادہ تر توانائی کے حوالے سے معاہدے ہیں جن میں گیس پائپ لائن منصوبہ سرفہرست ہے. ایران کی طرف سے یہ منصوبہ مکمل جبکہ پاکستان کی جانب سے امریکی دباو پر ادھورا ہے جس پر پاکستان عالمی قوانین کے تحت روزانہ کی بنیاد پر لاکھوں ڈالر جرمانے کی زد میں بھی آ چکا ہے.
ایران نے دوستی کا حق ادا کرتے ہوئے پاکستان کو جرمانے سے استثنیٰ دے دیا تھا. وہ پاکستان میں بھی پائپ لائن کی تعمیر کی پیشکش کرتا رہا ہے مگر امریکی دباؤ کے تحت پاکستان ایران کی اس سمیت دیگر کئی پیشکشوں سے فائدہ نہیں اٹھا پا رہا.
وزیراعظم پاکستان کی طرف سے ایران کے ساتھ منصوبوں کی تکمیل کے لیے جس عزم کا اظہار کیا گیا ہے اس سے منصوبوں کی تکمیل ممکن نظر آرہی ہے.
عمران خان نے امریکہ کو افغان طالبان کے ساتھ براہِ راست مذاکرات پر قائل کیا اور اب توقع ہے کہ وہ ایران کے ساتھ معاہدوں کی تکمیل کیلئے امریکہ کو پابندیوں سے استثنیٰ پر قائل کر کے یہ رکاوٹ بھی دور کر لیں گے.
9410*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@