جوہری ہتھیاروں سے عالمی سلامتی کو بڑا خطرہ لاحق ہے: ایران

نیو یارک، 9 مئی، ارنا - اسلامی جہوریہ ایران نے جوہری عدم پھیلاؤ معاہدے کی نظرثانی سے متعلق عالمی کانفرنس میں کہا ہے کہ جوہری ہتھیاروں سے عالمی امن و سلامتی اور پوری انسانیت کے لئے سنگین خطرات لاحق ہیں.

یہ بات ایرانی نمائندہ "علی رباط جزی" نے این پی ٹی معاہدے کی نظر ثانی سے متعلق اقوام متحدہ میں منعقدہ تیسری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے مزید کہا کہ جوہری ہتھیاروں سے پوری انسانیت کو خطرہ لاحق ہے اور اس خطرے کو ٹالنے کے لئے ایسے تمام مہلک ہتھیاروں کی تلفی ہونی چاہئے.
انہوں نے اقوام متحدہ کے رکن ممالک پر زور دیا کہ ان پی ٹی معاہدے کے من و عن نفاذ کو یقینی بنائیں جو مہلک ہتھیاروں کی روک تھام کا واحد ذریعہ ہے.
ایرانی نمائندے نے مزید بتایا کہ جوہری ہتھیار نہ رکھنے والے ممالک این پی ٹی معاہدے پر اچھی طرح عمل کررہے ہیں جبکہ بدقسمتی سے بعض جوہری طاقتیں اپنے وعدوں کی پاسداری نہیں کرتیں.
انہوں نے کہا کہ امریکہ اور بعض دیگر جوہری طاقتوں کے ناجائز صہیونی ریاست کے ساتھ جوہری تعاون ان پی ٹی معاہدے کی کھلی خلاف ورزی ہے جس نے جوہری عدم پھیلاؤ نظام کی دھجیاں اڑا کر رکھ دی ہیں.
علی رباط جزی نے بتایا کہ عالمی طاقتوں کے صہیونیوں کو جوہری تعاون کی فراہمی ان ممالک کا دہرے معیار ہے جس کا خاتمہ ہونا چاہئے.
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@