یورپی فریقین کو صورتحال کی واپسی کیلئے ایک تنگ ونڈو کے سامنے ہیں: ظریف

تہران، 8 مئی، ارنا – ایرانی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران جوہری معاہدے کے مطابق اقدامات کر رہا ہے اور اس معاہدے کے دوسرے پانچ رکن ممالک کو صورتحال کی واپسی کے لئے ایک تنگ ونڈو کے سامنے ہیں.

یہ بات "محمد جواد ظریف" نے بدھ کے روز اپنے ٹوئٹر پیج میں کہی.
اس موقع پر انہوں ںے کہا کہ 8 مئی 2018 کو امریکہ عالمی جوہری معاہدے سے نکل گیا، ٹرمپ نے سلامتی کونسل کی 2231 قرارداد کی خلاف ورزی کرتے ہوئے دوسرے تین یورپی ممالک کو ایسے اقدامات کرنے پر دباؤ ڈال لیا.
ظریف نے کہا کہ ایک سال کے بعد اسلامی جمہوریہ ایران کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوگیا اور ان اقدامات جو امریکہ نے ان کے تسلسل کو روک کردیا ہے، معطل کرے گا.
انہوں نے اس بات پر زور دیا اور کہا کہ ہم جوہری معاہدے کے مطابق عمل کر رہے ہیں اور دوسرے باقی پانچ رکن ممالک کو صورتحال کی واپسی کے لئے امید کی ایک کرن کا سامنا ہیں.
274*9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@