ایران، ہمارا دیرینہ شراکت دار ہے: روس

ماسکو، 7 مئی، ارنا- روسی محکمہ خارجہ نے ایک بیان میں ایرانی وزیر خارجہ کے دورہ روس پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ایران، مشرق وسطی میں روس کا دیرینہ اور قابل اطمینان شراکت دار ہے۔

تفصیلات کے مطابق، روسی محمہ خارجہ نے آنے والے دنوں میں ایرانی وزیر خارجہ "محمد جواد ظریف" اور ان کے روسی ہم منصب "سرگئی لاروف" کے درمیان ملاقات پر تبصرہ کرتے ہوئے ایران کیساتھ باہمی تعاون کو دونوں ملکوں کی قومی سلامتی کی فراہمی سمیت، وسطی ایشیا، قفقاز اور مشرق وسطی میں پایدار قیام امن و استحکام کی اہم شرط قرار دے دیا۔
روسی محکمہ خارجہ کے بیان میں مزید کہا ہے کہ مشرق وسطی کے بہت سارے مسائل کے حوالے سے ایران اور روس کا ایک جیسا موقف اپناتے ہیں۔
بیان میں کہا گیا ہے کہ ایران اور روس کے درمیان سیاسی مذاکرات اور تعلقات کا سلسلہ بدستور جاری ہے اور یہ دونوں ملک، خارجہ وزارتوں کے ذریعے رابطے میں ہیں اور ساتھ ساتھ سیاسی مسائل پر مذاکرات اور انسداد دہشتگری کے حوالے سے مشترکہ اقدامات کا میکنزم بھی دونوں ملکوں کے درمیان فعال ہے۔
روسی محکمہ خارجہ نے ایران اور روس کے درمیان پارلیمانی وفود کے تبادلہ پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اقوام متحدہ اور دیگر متعلقہ اداروں میں دونوں ملکوں کے درمیان تعمیری تعاون برقرار ہے۔
بیان میں 14 فروری کو سوچی اجلاس کے موقع پر ایران اور روس کے صدور کے درمیان ملاقات کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس ملاقات میں دونوں فریقین نے اتفاق کیا ہے کہ باہمی تعاون کے فروغ کے حوالی سے باقاعدہ طور پر رابطے میں رہیں۔
بیان میں مزید کہا کہ ایران اور روس کے درمیان مشترکہ اقتصادی کمیشن فعال ہونے کے ذریعے باہمی معاشی تعلقات میں قابل قدر اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اور اس اقتصادی کمیشن کا آئندہ اجلاس بھی 16سے 18 جون تک ایران میں منعقد ہوگا۔
یہ بات قابل ذکر ہے کہ توانائی کے شعبے میں دونوں ملکوں کے درمیان تعاون میں سے ایک ایرانی جنوبی شہر بوشہر میں ایٹمی پاور پلانٹ کے قیام کے حوالے سے روس کی شراکت داری ہے۔
روسی محکمہ خارجہ کے بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ روس، ایران جوہری معاہدے کے حوالے سے ایران کے تعمیری موقف کوسراہتے ہوئے اس کی بھر پور حمایت کرتا ہے اس کے علاوہ، روس، ایران مخالف امریکی غیر قانونی پابندیوں کا مخالف ہے۔
واضح رہے کہ "محمد جواد ظریف"، بدھ کے روز ماسکو میں اپنے روسی ہم منصب "سرگئی لاروف" کیساتھ باہمی مسائل سمیت، ایران جوہری معاہدے اور علاقائی اور بین الاقوامی مسائل کے بارے میں بات چیت کریں گے۔
اس کےعلاوہ ایران اور روس کے خارجہ وزارتوں کے درمیان تعاون پر مبنی منصوبوں کی توسیع اور دونوں ملکوں کے ائیر لائنز کمپنیوں کے کارکنوں کیلئے ویزہ اور قیام کے حوالے سے سہولیات کی فراہمی کیلئے تعاون کے معاہدے پر دستخط بھی دونوں ملکوں کے وزرائے خارجہ کے درمیان مذاکرات کے دیگر موضوعات ہیں۔
ایران اور روس کے وزرائے خارجہ کی نشست کے اختتام پر دونوں ملکوں کی شہریوں کیلئے سفری سہولیات کی فراہمی پر ایک مفاہمت کی یادداشت پر دستخط ہوگا اور دونوں ملکوں کے وزرائے خارجہ ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں ان مذاکرات کے نتایج کو ذرائع ابلاغ اور میڈیا والوں کیساتھ شیئر کریں گے۔
9467**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@