پاکستان ایران کیساتھ گیس پائپ لائن منصوبے کو مکمل کرنے کاخواہش مند

اسلام آباد، 7مئی، ارنا- پاکستان ایران کیساتھ گیس پائپ لائن منصوبے کو مکمل کرنے کاخواہش مند ہے اور اس حوالے سے حکومت پاکستان نے امریکہ، یورپین کونسل اور دیگر فورمزکو قانونی یادداشت بھیجنے کافیصلہ کیا ہے۔

ڈیلی پاکستان کے مطابق پاکستان کے وزیراعظم "عمران خان" نے پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے سے متعلق احکامات جاری کئے ہیں.
انہوں نے پاکستان کے وزارت خارجہ کو ایران کیساتھ تناؤ ختم کرنے کی ہدایت کردی ہے۔
عمران خان نے کہا ہے کہ ایران کیساتھ آئی پی گیس منصوبے کیلئے مفاہمتی طریقہ اختیارکیا جائے اور ایران سے گیس کی قیمت خرید پر بھی نظرثانی کا عمل شروع کیاجائے.
انہوں نے مزید کہا ہے کہ پاک ایران گیس منصوبے پر عمل درآمد کیلئے ایران کےساتھ مل کر امکانات تلاش کیے جائیں.
پاکستان کے وزیراعظم نے کہا کہ ایران پر عالمی پابندیاں، اس منصوبے پر ذمہ داریاں پوری کرنے میں رکاوٹ ہیں۔
واضح رہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے پاکستان کے توانائی بحران کو حل کرنے کیلئے اسلام آباد کیساتھ گیس پائپ لائن (آی پی) کے معاہدے پر دستخط کیا۔
ایران نے پانچ سال پہلے 2 ارب ڈالر سے زائد لاگت کیساتھ گیس منصوبے سے متعلق اپنی حدود میں پائپ لائن بچھانے کے عمل کو مکمل کیا ہے تا ہم حکومت پاکستان نے غیر ملکی دباؤ اور ایران پر عالمی پابندیوں کے بہانوں سے اب تک اس منصوبے کو مکمل نہیں کیا ہے۔
گیس پائپ لائن منصوبے کی شرائط کے مطابق پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبہ دسمبر 2014 تک مکمل ہونا تھا۔
9467**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@