ایران نے کینسر اور ذیابیطس کی نئی ادویات متعارف کردیں

تہران، 7 مئی، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کے سائنسدانوں کی تیار کردہ کینسر اور ذیابیطس کی چار نئی ادویات کو باضابطہ طور پر رونما کردیا گیا ہے.

تفصیلات کے مطابق، اس تقریب میں نائب ایرانی صدر برائے امور سائنس اور ٹیکنالوجی "سورنا ستاری" اور وزیر صحت ڈاکٹر "سعید نمکی" شریک تھے.
ایرانی صوبے البرز میں "باران" نامی فارمیسی کمپنی کے محققین نے ادویات کی پیداواری میں ترقی حاصل کرکے بعض بیماریوں کے علاج، ایرانی سائنسدانوں کی صلاحیتوں کے تعارف، ملکی آمدنی اور معیشت کی مدد میں اہم قدم اٹھا لئے ہیں۔
اس تیار شدہ ادویات کی کیفیت اسی طرح ملکی اور غیرملکی ادویات سے بہتری کی گئی ہے اور " امپاگلوفلوزین اور داپا گلوفلوزین " بالترتیب سالانہ 800 اور 100 کلوگرام تیار کی جاتی ہیں۔
اس ادویات کا ایک حصہ دنیا کے مختلف ممالک سمیت بھارت اور روس کو برآمد کیا جائے گا۔
274٭9393٭٭
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@