ایران عراق دفاعی تعاون علاقائی امن و استحکام کیلئے اہم قرار

تہران، 2 مئی، ارنا – ایران کے وزیر دفاع اور لاجسٹک نے اس بات پر زور دیا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور عراق کے درمیان قریبی دفاعی تعاون سے خطے میں قیام امن و استحکام کے لئے مدد ملے گی.

یہ بات بریگیڈیئر جنرل 'امیر حاتمی' نے عراق کی بری، نیول اور فضائیہ کے سنیئر کمانڈرز کے ساتھ ایک مشترکہ ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.
اس نشست میں فریقین نے دوطرفہ تعلقات، دفاعی تعاون، خطی صورتحال اور تازہ ترین عالمی مسائل پر تبادلہ خیال کیا.
ایرانی وزیر دفاع نے اس بات پر زور دیا کہ تہران اور بغداد کے درمیان مضبوط دفاعی تعاون سے خطے میں طاقت کا توازن بحال ہوگا.
انہوں نے مزید کہا کہ دونوں ممالک کو مشترکہ خطرات کا سامنا ہے جس سے نمٹنے کے لئے سیاسی اور عسکری قیادت کے درمیان باہمی مشاورت اور تعاون کی توسیع ناگزیر ہے.
بریگیڈیئر جنرل 'امیر حاتمی' نے امریکہ کی جانب سے ایران کی پاسداران انقلاب فورس کو دہشتگرد قرار دینے پر تبصرہ کرتے ہوئے اسے امریکیوں کی انتقامی کاروائی قرار دیا اور مزید کہا کہ پاسداران نے دہشتگردی کے خلاف عراق اور شام میں نمایاں کارکردگی دیکھائی جسے امریکہ ہضم نہیں کرسکتا.
274**9393*
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@