ترک وزیر خارجہ کی ایران کیخلاف دباؤ میں اضافے پر تنقید

تہران، 27 فروری، ارنا- ترکی نے اسلامی جمہوریہ ایران کیخلاف بیرونی دباؤ میں اضافے کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

یہ بات "میولوت چاوش اوغلو" نے "انسانیت دوست ڈپلومیسی اور انٹرپرائز" کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے مزید کہا کہ ترکی، پابندیوں کے دوران، اسلامی جمہوریہ ایران کیساتھ شانہ بشانہ کھڑا ہے۔
ترک وزیر خارجہ نے کہا کہ ان کا ملک انسداد دہشتگردی کے حوالے سے نہ صرف مذاکرات کی میز پر عمدہ صلاحیت رکھتا ہے بلکہ عملی میدان میں بھی دہشتگردی کے خلاف جنگ میں انتہائی مضبوط ہے۔
انہوں نے کہا کہ آج کی دنیا میں خارجہ پالیسی کا تعین اور نفاذ انتہائی مشکل ہے اور عالمی نظام کو سخت مسائل جیسے دہشتگردی اور مہاجرین کی بڑھتی ہوئی تعداد کا سامنا ہے۔
ترک وزیر خارجہ نے کہا کہ بین الاقوامی تنظیموں کے پاس اکیلے سے ان مسائل سے نمٹنے کی طاقت نہیں ہے اور اقوام متحدہ میں بنیادی اصلاحات کی ضرورت ہے۔
انہوں نے کہا کہ ہونے والے مسائل کے علاوہ آج کی دنیا میں دیرینہ اختلافات بھی ہیں جنہیں حل کرنے کیلئے بین الاقوامی طاقتوں کو بھی چیلینج کا سامنا ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ شامی مسئلہ کے حل کیلئے کی جانے والی کوششوں کے باوجود، اب تک کوئی مناسب نتیجہ نہیں نکلا ہے۔
ترک وزیر خارجہ نے کہا کہ ان کا ملک سیاسی اصولوں پر قائم ہے اور دنیا کے اہم طاقتوں میں سے ایک ہے۔
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@