ایران میں "جندی شاپور" یونیورسٹی کا دوسرا بین الاقوامی کانگریس منعقد ہوگا

تہران، 24 فروری، ارنا- ایران کے جنوب مغربی صوبے خوزستان کے شہر دزفول میں جندی شاپور یونیورسٹی کا دوسرا بین الاقوامی کانگریس آئندہ دنوں میں منعقد کیا جائے گا۔

رپورٹ کے مطابق، جندی شاپور یونیورسٹی کا دوسرا بین الاقوامی کانگریس 26 اور 27 فروری کو اس یونیورسٹی میں منعقد ہوگا۔
اب تک دنیا کے بعض نامور یونیورسٹی بشمول "سوربن Sorbonne" اور "بولونیاBologna" نے جندی شاپور یوونیورسٹی کے بین الاقوامی کانگریس میں شریک ہونے کیلئے اپنے آمادگی کا اظہار کیا ہے۔
جندی شاپور یونیورسٹی کا پہلا بین الاقوامی کانگریس گزشتہ دوسال پہلے منعقد ہوا تھا۔
جندی شاپور یونیورسٹی کا شمار دنیا کی سب سے پرانی یونیورسٹیوں میں ہوتا ہے جس کا سنگ بنیاد ایک ہزار 750 سال پہلے رکھا گیا تھا۔
جندی شاپور یو نیورسٹی کو دنیا کی سب سے پہلی یونیورسٹی کے طور پر مانا جاتا ہے جس سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ تاریخ کے دوران ایران کی ثقافت کتنی پرانی اور شاندار ہے-
2017 ء میں پیرس میں منعقدہ یونیسکو تنظیم کی 39 ویں جنرل کانفرس میں جندی شاپور یونیورسٹی اس تنظیم کی عالمی ورثے کی فہرست میں شامل کیا گیا اور اس یونیورسٹی کو دنیا کی سب سے پرانی یورنیورسٹی کے طور پر رجسٹرڈ کیا گیا۔
فی الحال، تقریبا 3200 طالعبلم جندی شاپور یونیورسٹی کے مختلف شعبوں بشمول فنی، آرکیٹیکچر، شہری منصوبہ بندی اور سائنس میں تعلیم حاصل کر کر رہے جبکہ 90 سے زائد اساتذہ بھی اس یونیورسٹی میں سرگرم عمل ہیں۔
تفصیلات کے مطابق، جندی شاپور جو 17 دہائیوں کی پرانی یونیورسٹی ہے ایران کے ساسانی عہد سے متعلق ہے جسے عالم اسلام اور مشرق وسطی کی سب سے پرانی یونیورسٹی کے طور پر مانا جاتا ہے۔
جندی شاپور کو عالم اسلام میں ایران، یونان اور بھارت کے میڈیکل سائنس کو رواج دینے میں انتہائی اہم کردار حاصل ہے۔
*9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@