شام پر ایران اور روس کیساتھ مذاکرت کا سلسلہ جاری رکھیں گے: ترک صدر

تہران، 24 فروری، ارنا- ترکی کے صدر نے سوچی میں شام سے متعلق سربراہی سہ فریقی اجلاس کے نتایج کو تعمیری قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان کا ملک ایران اور روس کیساتھ مذاکرات کا سلسلہ جاری رکھے گا۔

یہ بات "رجب طیب اردگان" ترکی کے صوبے " قہرمان ماراش" کے عوام سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے مزید کہا کہ ترکی اپنے اتحادیوں سمیت شامی علاقے ادلب میں ایک پرسکون علاقہ قائم کرنے کا خواہاں ہے لیکن اگر دوسرے فریقین اس حوالے سے ترکی کیساتھ تعاون نہ کریں تو ہم خود کسی بھی صورتحال میں اپنے وسائل اور صلاحیتوں کے ذریعے، اس مہم کو انجام تک پہنچیں گے۔
ترکی کی حکمران جماعت عدالت و توسعہ کے صدر نے کہا ہے ترکی کا اپنے تمام اتحادیوں سے شامی علاقے ادلب میں امن و استحکام برقرارکرنے کا مطالبہ ہے جبکہ ترکی نے اسی حوالے سے ایران اور روس کیساتھ بھی تعمیری مذاکرات کیا ہے۔
تفصیلات کے مطابق، گزشتہ ہفتوں میں روسی حکومت کی میزبانی میں ایران، روس اور ترکی کے سہ فریقی سربراہی اجلاس کا چوتھا دور، روسی شہر سوچی میں منعقد ہوا۔
ہونے والے اجلاس میں ایران، روس اور ترکی کے صدور نے شام میں انسداد دہشتگردی سمیت پناہ گزینوں کی بحالی، بنیادی ڈھانچے کی نئی تعمیرات بالخصوص شام میں سماجی اور معاشی خوشحالی کے امورسے متعلق بات چیت کی۔
*9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@