قطر کا ایران جوہری معاہدے کا تسلسل جاری رکھنے پر زور

تہران، 20 فروری، ارنا- قطر کے وزیر خارجہ نے ایران جوہری معاہدے کی اہمیت کا ذکر کرتے ہوئے اس معاہدے کو برقرار رکھنے پر زور دیا۔

یہ بات "محمد بن عبدالرحمن آل ثانی" نے جرمن جریدے "Handelsblatt" کیساتھ انٹریو دیتے ہوئے کہی۔
انہوں نے ایران جوہری معاہدے کو ایک بڑی کامیاب سفارتکاری قرار دیتے ہوئے کہا کہ جوہری معاہده، طے پانے کے بعد خلیج فارس تعاون کونسل کے سارے ممالک، اس کے ثمرات سے مستفید ہوگئے۔
قطری وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ امریکہ کے نئے صدر "ڈونلڈ ٹرمپ" کے بر سر اقتدار آنے کے بعد خلیج فارس تعاون کونسل کے بعض ممالک نے ایران جوہری معاہدے سے متعلق اپنے موقفوں کو بدل دیا۔
انہوں نے مزید کہا کہ اگر ایران، جوہری معاہدے کے ثمرات سے مستفید نہ ہوجائے تو خطے پر برے اثرات مرتب ہوں گے۔
یاد رہے کہ گزشتہ سال مئی میں ایران جوہری معاہدے سے امریکہ کی غیرقانونی علیحدگی کے بعد، یورپی یونین نے اس کے خلاف مؤقف اپنایا اور اس نے ایران کے ساتھ تجارت کو جاری رکھنے کے لئے موثر طریقہ اپنانے کا اعلان کر رکھا.
اس کے بعد رومانیہ میں یورپی یونین کے وزارتی اجلاس کے موقع پر جرمنی، برطانیہ اور فرانس کے وزرائے خارجہ نے ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں ایران کے لئے مخصوص مالیاتی نظام کے اجرا کا باضابطہ طور پر اعلان کردیا.
رپورٹ کے مطابق، یورپ کے مخصوص مالیاتی چینل کا مرکزی دفتر پیرس میں ہوگا جسے INSTEX کا نام دیا گیا ہے اور یہ تجارتی تبادلے کے سازوسامان کا مخفف ہے.
تینوں یورپی ممالک انسٹیکس میکنزم کے حصہ دار ہوں گے اور نامور جرمن بینکر اس کی قیادت کریں گے.
*9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@