عراق کی تعمیر نو، ایران مدد کیلئے پُرعزم

سامراء، 20 فروری، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے کہا ہے کہ عراق کی تعمیر نو کے عمل میں ایرانی سرگرمیوں کا باضابطہ آغاز ہوگیا ہے اور ایران اس حوالے سے پُرعزم ہے.

یہ بات عراق میں موجود ایرانی سفیر ''ایرج مسجدی'' نے عراقی شہر بلد میں صلاح الدین صوبے کے اراکین کونسل کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران ، عراق کی تعمیر نو کی سرگرمیوں میں پُرعزم ہے اور ہم سنجیدگی سے اس منصوبے کو آگے بڑھائیں گے.
ایرانی سفیر نے اس عہد کا اعادہ کیا کہ ایران جس طرح حالیہ برسوں میں داعش سمیت دہشتگردوں کے خلاف جنگ میں عراقی قوم اور حکومت کے ساتھ کھڑا تھا ویسے ہی عراق کی تعمیرنو کے لئے بھی اس ملک کے شانہ بشانہ کھڑا رہے گا.
انہوں نے مزید کہا کہ کوئی بھی طاقت یا ملک ایران عراق تعلقات کو متاثر نہیں کرسکتے.
ایرج مسجدی نے بتایا کہ عراقی تعمیرنو کے عمل میں شریک ایرانی کمپنیوں کی جانب سے سرگرمیوں کا باضابطہ آغاز ہوگیا ہے اور اس منصوبے کو بڑی سنجیدگی سے مکمل کیا جائے گا.
انہوں نے مزید کہا کہ عراقی وزیر بجلی نے حال ہی میں ایران کا دورہ کیا تھا اور اس دوراں یہ فیصلہ کیا گیا کہ ایران کی توانائی کمپنیوں کے تعاون سے عراق میں بجلی کے مسائل کو آئندہ تین سے چار سالوں میں ختم کیا جائے گا.
ایرانی سفیر نے امریکی پالیسی سے متعلق کہا کہ امریکہ نہیں چاہتا کہ مسلم اقوام عزت اور طاقت کے ساتھ زندگی گزاریں بلکہ وہ اپنی طاقت اور مداخلت کو مسلط کرنا چاہتا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ اسلامی ریاستوں کی طاقت اور ان کی مزاحمت سے خوفزدہ ہے اور یہی وجہ ہے کہ اس نے ایران پر دباؤ ڈال رہا ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@