سعودیہ، ایران پاکستان تعلقات میں دراڑیں نہیں ڈال سکتا: قاسمی

تہران، 19 فروری، ارنا – ایرانی دفترخارجہ کے ترجمان نے عادل الجبیر کی حالیہ اشتعال انگیز اور نفرت بھری باتوں کے جواب میں کہا ہے کہ ایران اور پاکستان سنجیدگی اور افہام و تفہیم سے کام لیتے ہیں لہذا سعودی حکام حالیہ شیطانی واقعات کے ذریعے دونوں ممالک کے تعلقات کو خراب نہیں کرسکتے.

یہ بات 'بہرام قاسمی' نے سعودی وزیر مملکت برائے خارجہ امور عادل الجبیر کی ایران مخالف ہرزہ سرائی کے جواب میں کہی.
انہوں نے مزید کہا کہ سعودی عرب عالمی سطح پر انتہاپسندی، تشدد اور دہشتگردی کا اصل مرکز ہے اور وہ دوسروں پر الزامات عائد کرنے کی حیثیت نہیں رکھتا کیونکہ کہ وہ خود خطے اور دنیا میں دہشتگردی کا سرغنہ ہے.
قاسمی کے مطابق، ایران اور پاکستان کی قیادت سمجھدار ہے اور یقینا سعودیہ زاہدان دہشتگردی حملے جیسے حالیہ رونما ہونے والے شیطانی واقعات کا غلط فائدہ اٹھا کر پاک ایران تعلقات میں دراڑیں نہیں ڈال سکتا.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور پاکستان قریبی تعلقات اور پڑوسی ملک ہونے کا اچھی طرح ادراک ہے تاہم ایران کی پاکستان سے یہی توقع ہے کہ وہ سرحدپار دہشتگردوں کے خلاف فیصلہ کن ایکشن لے تا کہ دہشتگرد عناصر پاکستانی سرزمین کو ایران کے خلاف استعمال نہ کرسکے.
بہرام قاسمی نے کہا کہ ایران نے حالیہ صورتحال سے متعلق اپنی توقعات اور خدشات کو پاکستان تک پہنچایا ہے اور اس کے علاوہ ہم نے اس مسئلے کو سیاسی، عسکری اور انٹیلی جنس سطح پر اٹھایا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ ہم ایران اور پاکستان کے دوطرفہ تعلقات کے پیش نظر دہشتگردوں کے انسانیت سوز جرائم کی روک تھام کے لئے اپنی کوششیں جاری رکھیں گے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@