ایران دوسرے ممالک میں دہشتگردوں سے نمٹنے کی صلاحیت رکھتا ہے

تہران، 18 فروری، ارنا - ایرانی وزارت داخلہ کے ڈائریکٹر جنرل برائے سرحدی امور نے کہا ہے کہ اگر پاکستانی حکومت علاقے میں دہشتگردوں سے مقابلہ نہیں کرسکتا ہے مگر اسلامی جمہوریہ ایران کسی بھی ملک میں ایران مخالف بدامنی واقعات سے نمٹنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

یہ بات "شہریار حیدری" نے پیر کے روز زاہدان میں حالیہ دہشتگردی حملے کے حوالے سے پریس کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے کہی۔
حیدری نے کہا کہ ایسے اقدامات عالمی قوانین کی مبنی پر ہوجانا چاہئیے اور اسلامی جمہوریہ ایران اس قوانین کا احترام کرتا ہے۔
انہوں نے کہا کہ پاکستانی حکومت ذمہ دار ہے لہذا ہم اس سے ایران میں دہشتگردی گروہوں کی بیس کو مشاہدہ کرنے کا مطالبہ کر رہے ہیں اور ہمارے ملک کے ساتۂ باہمی تعاون کرے۔
انہوں نے اس بات پر زور دیا اور کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ پاکستانی حکومت جلد سے ایسے واقعات کو خاتمہ اور اس ملک میں دہشتگردوں کی سرگرمیوں کو غور سے مشاہدہ کرے۔
ایرانی اہلکار نے کہا کہ بعض عرب اور مغربی ممالک بالخصوص امریکہ اور ناجائز صہیونی ریاست دہشتگردوں کی سرگرمیوں کی مالی اور معلوماتی حمایت کر رہے ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان نے گزشتہ روز زاہدان میں دہشتگردی حملے کے جائزے کے لئے ایک مخصوص وفد ایران کا بہیجا اور ہمیں امید ہے کہ اس نشستوں میں مشترکہ نتائج حاصل ہوگا اور ایک بار ایسی دہشتگردی کاروائی نہیں کی جائے گی۔
انہوں نے ایران کے جنوبی علاقے میرجاوہ میں دہشتگردوں کے ہاتھوں یرغمال ہونے والے 12 سرحدی اہلکاروں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ایرانی اور پاکستانی حکومتوں کی کوششوں کے ساتہ پانچ سرحدی محافظ رہا کردیا گیا اور باقی کے سرحدی اہلکار مکمل صحت و سلامتی میں ہیں.
حیدری نے کہا کہ پاکستانی حکومت اس سرحدی اہلکاروں کی سلامتی اور وطن کی واپسی کی ذمہ دار ہے اور اسلامی جمہوریہ ایران کی جانب سے مسلسل طور پر انھیں بازیاب کرانے کی کوششیں بھی جاری ہیں.
274٭9393٭٭
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@