پوپ فرانسس سے امام موسی صدر کے اغوا کے معاملے کو دیکھنے کا مطالبہ

تہران، 15 فروری، ارنا - لبنان کے لاپتہ اعلی شیعہ رہنما امام موسی صدر کے اہل خانہ نے عیسائیوں کے روحانی پیشوا "پوپ فرانسس" سے امام موسی صدر کے اغوا کے معاملے کو قریب سے دیکھنے اور انجام تک پہنچانے کی درخواست کی ہے.

رپورٹ کے مطابق، ویٹیکن میں امام موصی صدر کے لاپتہ ہونے کے 40 سال گزرنے سے متعلق ایک تقریب کے موقع پر ان کے اہل خانہ نے اپنے ایک خط کے ذریعے پوپ فرانسس سے شیعہ رہنما کے اغوا کو دیکھنے کا مطالبہ کیا ہے.
واضح رہے کہ لبنان کے شیعہ رہنما اور اعلی مجلس کے بانی امام موسی صدر نے اپنے دو ساتھیوں کے ہمراہ 1978 میں لیبیا کے سابق ڈکٹیٹر کرنل قذافی نے کی دعوت پر اس ملک کا دورہ کیا تھا جس کے بعد وہ اپنے دونوں ساتھیوں سمیت لاپتہ ہوئے اور اب تک ان کے بارے میں کچھ پتہ نہیں چل سکا.
ان کے لاپتہ ہونے کے بارے میں مختلف قیاس آرائیاں کی جاتی رہی ہیں لیکن لبنان کے عوام اور حکام لیبیا کی سابق حکومت کو ان کے اغوا کا ذمہ دار قرار دیتے ہیں.
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@