ایران میں بلوچ خواتین کی کڑھائی دنیا میں منفرد ہے: پاکستانی سفیر

چابہار، 15 فروری، ارنا - ایران میں تعینات خاتون پاکستانی سفیر نے کہا ہے کہ ایران کی بلوچ خواتین کی کڑھائی سے تیار کی جانے والی مصنوعات دنیا میں منفرد ہیں.

''رفعت مسعود'' نے ایران کے جنوبی علاقے ''چابہار'' میں منعقد فیشن اور ملبوسات میلے میں شرکت کی.
اس موقع پر انہوں نے ارنا نیوز کے نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے بلوچ خواتین کی کڑھائی کو قابل تحسین قرار دیتے ہوئے اس ہنر پر خصوصی توجہ دینے پر زور دیا.
انہوں نے مزید کہا کہ روائتی ہنر بالخصوص بلوچ خواتین کے ہاتھوں تیار کی جانے والی کڑھائی اور ملبوسات کی مارکیٹنگ کے لئے اقدامات کرنا ہوں گے.
خاتون پاکستانی سفیر نے کہا کہ چابہار کے ملبوسات میلے میں بلوچ خواتین کی مصنوعات کو روشناس کرانا ایک سنہری موقع ہے اور میں سمجھتی ہوں کہ بلوچ خواتین بھی اپنے ہنر کو پوری دنیا تک روشناس کرانے کی خواہش مند ہیں.
انہوں نے مزید کہا کہ آج دنیا میں روائتی دستکاری ختم ہوتی جارہی ہے جبکہ بلوچ کڑھائی کے ہنر نے اب بھی اپنی اہمیت کو برقرا رکھا ہوا ہے.
انہوں نے چابہار میں فیشن میلے کے انعقاد پر ایرانی حکام کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے قومی ورثے اور ثقافت کے فروغ پر زور دیا.
یاد رہے کہ چابہار کے ملبوسات اور فیشن میلے میں 18 ملکوں نے حصہ لیا ہے جن میں 200 ملکی اور غیرملکی پیداواری مراکز شامل ہیں.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@