امریکہ، شام پر اپنے قبضے کو ختم کرے: ایرانی سپہ سالار

تہران، 14 فروری، ارنا - ایرانی مسلح افواج کے سربراہ نے کہا ہے کہ شام سے امریکی انخلاء کی باتیں صرف دعووں کی حد تک ہیں جبکہ امریکہ کو اپنے قبضے کا خاتمہ کرنا ہوگا.

یہ بات میجر جنرل ''محمد باقری'' نے روسی شہر سوچی میں روس اور ترک وزرائے دفاع جنرل ''سرگئی شوئیگو'' اور جنرل ''ہلوسی اکر'' کے ساتھ ایک مشترکہ ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.
فریقین نے اس موقع پر دفاعی اور عسکری شعبوں میں مشترکہ تعاون، شام میں دہشتگردی کے خلاف جنگ، امریکی انخلاء کی صورت میں آئندہ صورتحال پر تعاون، شامی علاقے ادلیب میں دہشتگردوں کے خلاف فیصلہ کاروائی اور امن زون کو بڑھانے سے متعلق گفتگو کی.
ایران سپہ سالار نے کہا کہ امریکہ کے شام سے انخلاء ابھی صرف ایک دعویٰ ہے، ایران، روس اور ترکی بحیثیت آستانہ امن عمل کے ضامن ممالک شام سے غیرملکی فورسز کے جلد انخلاء کا مطالبہ کرتے ہیں.
انہوں نے مزید کہا کہ شام میں غیرملکی فورسز دمشق حکومت کی اجازت کے بغیر موجود ہیں جنہوں نے شام کے بعض علاقوں پر قبضہ کیا ہوا ہے.
انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ شام میں ایرانی اور روسی فورسز کی موجودگی دمشق حکومت کی باضابطہ منظور کی تحت ہے.
جنرل باقری نے کہا کہ شام میں تشدد میں کمی، پناہ گزینوں کی واپسی، آزاد ہونے والے علاقوں کو سیکورٹی کی فراہمی اور مخصوص علاقوں میں بیچھائے گئے بارودی سرنگوں سے پاک کرنا ایران، روس اور ترکی کے مشترکہ تعاون کی اہم ترجیحات ہیں.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@