برطانیہ نے ایران سے متعلق انسٹیکس میکنزم پر امریکی پابندیوں کو مسترد کردیا

لندن، 12 فروری، ارنا - برطانوی حکومت نے ایران کے ساتھ تجارت کے لئے انسٹیکس میکنزم کے استعمال کرنے والوں پر امریکی پابندیوں کو مسترد کردیا ہے.

برطانیہ کے حکومتی ترجمان نے اس حوالے سے ارنا نیوز ایجنسی کو بتایا کہ امریکی حکام کے بیانات سے ہمیں یہ بات پتہ چلتی ہے کہ انھیں اس بات کا ادراک ہوچکا ہے کہ یورپی ممالک کو ایران جوہری معاہدے پر قائم رہنا ہوگا.
انہوں نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر مزید کہا کہ انسٹیکس میکنزم کے استعمال کرنے والوں پر پابندیاں لگانے کی امریکی دھمکی سے متعلق کہا کہ ایران جوہری معاہدہ ہماری لئے اہمیت رکھتا ہے اور ہم اسے بچانے کے لئے پورا زور لگائیں گے.
برطانوی ترجمان نے یورپی ممالک کی جانب سے ایران کے ساتھ تجارت کے لئے انسٹیکس میکنزم کے قیام کو غیرمعمولی اقدام قرار دیا اور مزید کہا کہ اس میکنزم پر تاخیر کے حوالے سے ایران کی گلہ درست ہے تاہم اس تاخیر کی وجہ یہ ہے کہ انسٹیکس میکنزم ایک پیچیدہ نظام تھا جس پر کام کرنے کے لئے بہت وقت چاہئے تھا.
انہوں نے کہا کہ یورپ نے انسٹیکس میکنزم کے اجرا پر ایران کے لئے کوئی شرط لاگو نہیں کی بلکہ ہم اسے جلد نافذ کرنے کے لئے پُرعزم ہیں.
ترجمان نے بتایا کہ یورپی کمپنیاں ایران کے ساتھ تجارت کے لئے انسٹیکس میکنزم سے فائدہ اٹھانا چاہتی ہیں.
ڈونلڈ ٹرمپ جو جنوری 2017 میں بطور امریکی صدر اقتدار میں آئے تھے، نے گزشتہ 8 مئی کو غیرقانونی طور پر ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی کا اعلان کردیا اور اس کے علاوہ ایران پر پرانی پابندیاں عائد کرنے کا بھی حکم جاری کردیا.
امریکی صدر نے ایران کو تنہائی کا شکار کرنے کے لئے اقتصادی دباؤ اور پابندیاں کا طریقہ کار اپنایا ہوا ہے جبکہ ایران نے اپنے وعدوں پر عمل کیا اور عالمی جوہری ادارہ بھی اس بات کی بارہا تصدیق کرچکا ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@