دنیا کیساتھ تعمیری تعلقات جاری رکھیں گے: ایرانی صدر

تہران، 11 فروری، ارنا - صدر مملکت اسلامی جمہوریہ ایران نے اسلامی انقلاب کی 40ویں سالگرہ کے موقع پر کہا ہے کہ ایران کی جانب سے عالمی برادری کے ساتھ تعمیری تعلقات کا سلسلہ جاری رہے گا.

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر ''حسن روحانی'' نے پیر کے روز تہران میں یوم آزادی کی مرکزی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا.
اس موقع پر انہوں نے انقلابی ریلیوں میں قوم کی بھرپور شرکت کو سراہتے ہوئے مزید کہا کہ ایرانی عوام کی انقلاب کی 40ویں سالگرہ کی ریلیوں میں شرکت سے دشمنوں کی گزشتہ ایک سال سے سازشوں کی ناکامی ظاہر ہوتی ہے.
انہوں نے کہا کہ دشمن اپنے مکروہ عزائم کو پایہ تکمیل تک نہیں پہنچا سکتا.
انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ دنیا میں ایران کی پوزیشن کو مزید بہتر کریں گے اور اس کے علاوہ ملک کی دفاعی اور عسکری صلاحیت میں اضافہ کرنے کا سلسلہ بھی جاری رہے گا.
ڈاکٹر روحانی نے ایران کی بڑھتی ہوئی عسکری اور فوجی طاقت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ایرانی ماہرین اور سائنسدانوں کے ہاتھوں ملک کی 85 فیصد دفاعی ضرریات اور سامان حرب کو تیار کیا جاتا ہے.
انہوں نے خطے میں ایران کے اہم کردار کا حوالہ دیتے ہوئے مزید کہا کہ ایران خطے میں تاریخی کردار ادا کرتا آرہا ہے، ہم واحد ملک ہیں جو دہشتگردی کے خلاف دوسرے علاقائی ممالک کے مدد کے لئے پہنچتے ہیں.
انہوں نے مزید کہا کہ شام و عراق میں داعش کی شکست خطے میں ایران کی طاقت اور دہشتگردی کے خلاف ہماری خلوص نیت کو ظاہر کوتی ہے.
صدر روحانی نے مزید کہا کہ ایرانی عوام کی مختلف شعبوں میں ترقی بالخصوص معاشی پیشرفت اسلامی انقلاب کی بڑی کامیابیوں کا ایک حصہ ہے. آج ایران میں سالانہ 122 ملین ٹن زرعی مصنوعات کی پیداوار ہوتی ہے جبکہ 40 سال پہلے ملک کی زرعی پیداوار صرف 26 ملین ٹن تھی.
انہوں نے مزید کہا کہ انقلاب کے بعد ایران سے زرعی مصنوعات کی برآمدات میں 20 گنا اضافہ ہوگیا.
ایرانی صدر نے کہا کہ وطن عزیز نے صنعت، سائنس اور ٹیکنالوجی میں بھی قابل قدر کامیابیاں حاصل کیں جبکہ آج ایران پیٹرول کی پیداوار میں خود کفیل بن گیا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ آج ایران اپنی 95 فیصد ادویات کی ضرریات کو ملک کے اندر سے پورا کرتا ہے اور صنعتی شعبے میں ملک کی ترقی انقلاب کے دوران کے مقابلے میں بڑی سطح پر آگئی ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران نے پہلے بھی میزائل بنانے کے لئے کسی سے اجازت نہیں لی اور آئندہ بھی نہیں لے گا بلکہ دفاعی اور عسکری طاقت میں اضافہ کرنے کا سلسلہ جاری رہے گا.
ایرانی صدر نے کہا کہ گزشتہ چالیس سال بالخصوص حالیہ پانچ برس میں ایران کی دفاعی طاقت سے دنیا حیران ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ دنیا جان لے کہ انقلاب کے بعد آج اسلامی جمہوریہ ایران زیادہ طاقتور ہے.
ایرانی صدر نے کہا کہ آج ہمیں دشمنوں کی نفسیاتی جنگ کا سامنا ہے لہذا ہمیں اس جنگ میں کامیاب ہونے کے لئے ایک دوسری کے شانہ بشانہ کھڑا رہنا گا.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران ہرگز اس جنگ میں امریکہ کو کامیاب نہیں ہونے دے گا، امریکہ نے حالیہ برسوں میں کوئی دفعہ یہ دعویٰ کیا کہ ایرانی نظام ختم ہونے والا ہے، جبکہ ایسا کچھ نہیں ہوا بلکہ اس کے برعکس ہماری عزت میں مزید اضافہ ہوا.
ڈاکٹر روحانی نے کہا کہ ایرانی عوام مزاحمت اور باہمی اتحاد سے تمام مشکلات پر قابو پالیں گے. قومی امنگوں میں کوئی تبدیلی نہیں آئی جبکہ یہ وہی امنگیں ہیں جنہیں قوم نے چالیس سال پہلے اپنے لئے متعین کیا تھا.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@