انقلاب کے بعد ایران میں بجلی کی پیداوار میں 11 گنا اضافہ ہوگیا

تہران، 11 فروری، ارنا - ایرانی وزیر توانائی نے کہا ہے کہ اسلامی انقلاب کے بعد ملک میں بجلی کی پیداوار کی شرح سالانہ 7 ہزار میگاواٹ سے 80 ہزار میگاواٹ تک پہنچ گئی ہے.

''رضا اردکانیان'' قومی نشریاتی چینل کے ایک پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ 1979 کے دوران ایران میں موجود پاور ہاوسز کے ذریعے 7 ہزار بجلی پیدا کی جاتی تھی جبکہ انقلاب کے بعد بجلی گھروں کی تعداد میں قابل قدر اضافہ کیا گیا.
انہوں نے کہا کہ آج ایران میں سالانہ 80 ہزار بجلی بنائی جاتی ہے اور تقریبا 99.5 فیصد کی آبادی بجلی کی سہولت سے مستفید ہورہی ہے.
ایرانی وزیر توانائی نے بتایا کہ ملک کے دیہی علاقوں میں بھی بجلی کی فراہمی کو مکمل کردیا گیا ہے جبکہ آج ہر وہ گاوں جس میں کم سے کم 10 خاندان رہتے ہوں وہاں بجلی میسر ہے.
انہوں نے بتایا کہ انقلاب کے دور میں 4367 گاوں میں بجلی میسر تھی جبکہ انقلاب کے بعد اس کی تعداد 57 ہزار تک پہنچ گئی.
رضا اردکانیان نے مزید بتایا کہ آج بجلی گھروں کو دنیا کی جدیدترین ٹیکنالوجی فراہم کی گئی ہے اور آج نہ فقط ہم بجلی کی پیداوار کو بڑھایا ہے بلکہ اپنے ہمسایہ ممالک کی بجلی ضروریات کو بھی فراہم کررہے ہیں.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@