ملکی دفاع کیخلاف دھمکیوں سے خوفزدہ نہیں ہوں گے: ایرانی سپہ سالار

تہران، 7 فروری، ارنا - ایرانی مسلح افواج کے سربراہ نے کہا ہے کہ ایران اپنی دفاعی، میزائل قابلیت اور علاقائی مفادات سے متعلق سامراج قوتوں اور توسیع پسند ممالک کی دھکمیوں سے خوفزدہ نہیں ہوگا.

یہ بات میجر جنرل 'محمد باقری' نے جمعرات کے روز دفاعی نمائش کے موقع پر ایران میں مقیم غیرملکی سفرا اور دفاعی اتاشیوں کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران کا سامراج حکومتوں اور توسیع پسند ممالک کو یہی پیغام ہوگا کہ ہم ان کی دھمکیوں سے پیچھے ہٹنے والے نہیں اور نہ ہی ہم اپنے دفاع، میزائل پروگرام اور علاقائی مفادات پر سمجھوتہ کریں گے.
انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران ملک دشمن عناصر اور سامراج قوتوں کی تمام سازشوں کا اچھی طرح مقابلہ کرنے کے لئے آمادہ ہے.
جنرل باقری نے کہا کہ ایران میں اسلامی انقلاب کی فتح کو 40 سال بیت گئے اور آج ایران کے چپے چپے میں عوام انقلاب کا جشن منارہے ہیں اور یہ وہی ایام ہے جب ایران کے غیرت مند عوام نے ظالم شہنشاہ کا تختہ الٹا کر امام خمینی (رح) کی قیادت میں ملک میں اسلامی جمہوری نظام قائم کردیا جس کے لئے ہم نے اڑھائی لاکھ شہید دئے.
انہوں نے مزید کہا کہ دہشتگردی کے خلاف ایران کی موثر کارکردگی اور قربانیاں بے مثال ہیں، ایران نے شام اور عراق کی مسلح افواج کے ساتھ مل کر داعش کی کمڑ توڑدی.
ایرانی سپہ سالار نے کہا کہ ایران ہرگز جارحانہ رویہ نہیں رکھتا بلکہ اس نے اپنی تاریخ میں دنیا کے ساتھ باہمی احترام پر مبنی تعلقات اور تعاون کے لئے آگے بڑھے.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران نے پُرامن جوہری سرگرمیوں کے لئے نہایت نیک نیتی سے کام کیا، گروہ 1+5 کے ساتھ مذاکرات کئے جس کے بعد اپنے وعدوں پر من و عن عمل کیا مگر دوسری جانب امریکہ نے غیرقانونی طور پر اس معاہدے سے نکلنے کے بعد عالمی قوانین کی کھلی خلاف ورزی کردی.
میجر جنرل باقری نے کہا کہ آج ایرانی مسلح افواج صرف وطن اور قوم کے دفاع کے لئے صف اول میں نہیں بلکہ ہمارے جوانوں نے یہ ثابت کردیا ہے کہ وہ عالمی امن و سلامتی اور علاقائی قوموں کے تحفظ کے لئے بھی کسی قربانی اور جاں فشانی سے دریغ نہیں کرتے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@