ایران کا یورپ کیساتھ تعمیری تعاون پر زور

تہران، 5 فروری، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے مخصوص مالیاتی میکنزم سے متعلق یورپی یونین کے حالیہ بیان کے ردعمل میں کہا ہے کہ ایران، یورپ کے ساتھ باہمی احترام اور مشترکہ مفادات کی بنیاد پر تعمیری تعاون کا خواہاں ہے.

دفترخارجہ کا بیان جاری کرنے کا مقصد یورپی یونین کی جانب سے گزشتہ رات شائع ہونے والے بیان کا جواب دینا تھا.
یورپی بیان میں بعض مثبت نکات کا ذکر کیا گیا تھا جس کا ایران نے خیرمقدم کیا تاہم دفترخارجہ کے بیان میں یورپ کے بعض منفی نکات پر تنقید کی گئی.
بیان کے مطابق، حالیہ برسوں میں ایران اور یورپ کے درمیان طے پانے والے مذاکرات اور تعاون سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ فریقین کے پاس تعاون اور مشترکہ تعلقات کو بڑھانے کے لئے اچھی صلاحیتیں موجود ہیں.
اسلامی جمہوریہ ایران نے یورپ کی جانب سے جوہری معاہدے اور ایران سے تعلقات کے حوالے سے مؤقف کا خیرمقدم کرتے ہوئے یورپی ممالک سے مطالبہ کیا ہے کہ مخصوص مالیاتی میکنزم کے فوری نفاذ میں کوئی دیر نہ کی جائے اور اس کی پہلی ترجیح ایران کے اقتصادی مفادات کا حصول ہو.
دفترخارجہ کے بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ یورپ میں دہشتگردی سے متعلق ایران پر لگائے جانے والے الزامات سراسر بے بنیاد ہیں جس کا اصل مقصد ایران یورپ تعلقات کو متاثر کرنا ہے لہذا یورپی ممالک کو چاہئے کہ حقائق کا ادراک کرتے ہوئے ایسے الزامات پر غیرتعمیری مؤقف اپنانے سے گریز کریں.
بیان کے مطابق، ایران کے دفاعی معاملات سے متعلق پہلے بھی اعلان کیا جاچکا ہے کہ دفاعی سرگرمیوں کا مقصد ایران کی سلامتی کو یقینی بنانا ہے لہذا اس سے متعلق ایران کسی بھی ملک کے ساتھ مذاکرات نہیں کرے گا.
ایرانی دفترخارجہ کے بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ایران کے خلاف انسانی حقوق کو بطور سیاسی مقاصد استعمال کرنا قابل مذمت ہے. یورپی ممالک کو چاہئے کہ ایران میں انسانی حقوق کی صورتحال پر نام نہاد تشویش کا اظہار کرنے کے بجائے فلسطینیوں پر صہیونی مظالم اور یمن پر سعودی قیادت میں اتحادی ممالک کی جارحیت کو دیکھیں.
بیان کے مطابق، یورپ سے توقع کی جاتی ہے کہ اپنے وعدوں پر مکمل پابندی کے ساتھ عمل کرے تا کہ قلیل مدت میں دوطرفہ تعلقات کو مزید فروغ دینے کا ماحول فراہم ہو.
ایرانی دفترخارجہ نے اس بات پر زور دیا کہ یورپ، انسٹیکس میکنزم کو ایف اے ٹی ایف جیسے غیرمتعلقہ معاملات سے نہ جوڑے اور ایران جوہری معاہدے کے نکات کے تحت اس نظام پر فوری عملدرآمد کو یقینی بنائے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@