ایران نے 40 سالوں میں طب کے شعبے میں بڑی ترقی حاصل کی: صدر روحانی

تہران، 4 فروری، ارنا - صدر مملکت ایران نے کہا ہے کہ اسلامی انقلاب کی بدولت ایران نے گزشتہ چالیس سالوں میں طب کے شعبے میں قابل قدر کامیابیاں حاصل کی ہیں.

یہ بات ڈاکٹر حسن روحانی نے آج پارلیمنٹ کے ایک خصوصی اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کہی.
ایرانی صدر نامزد وزیر صحت سعید نمکی کی نامزدگی کا دفاع کرنے کے لئے پارلیمنٹ کے اجلاس میں شریک ہوئے.
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ سب جانتے ہیں کہ بیماروں کے مسائل، صحت کی لاگت، بیماریوں کی روک تھام، اس حوالے سے خودمختاری اور صحت کی سیاحت کی مبنی پر طبی میدان ہمارے لئے بہت ہی اہم ہے.
صدر روحانی نے کہا کہ ہمارے عوام نے اسلامی انقلاب کی بدولت مختلف سماجی خدمات بالخصوص صحت کے شعبوں میں بہت کامیابیاں حاصل کی ہیں اور گزشتہ آمار و ارقام کے مطابق، اسلامی جمہوریہ ایران کے نظام ںے اس 40 سالوں کے دوران عوام کے صحت کے لئے بڑے اقدامات اٹھایا ہے.
ایرانی صدر نے مزید کہا کہ اسلامی انقلاب کی کامیابی سے دو سال پہلے ہمارے ملک میں 14700 ڈاکٹرز موجود تھے جن میں سے چھ ہزار ڈاکٹرز اجنبی تھے اور ملکی صحت اور علاج کا نصف غیر ملکی ڈاکٹروں سے منسلک تھا.
انہوں نے کہا کہ اسلامی انقلاب سے پہلے اسلامی جمہوریہ ایران میں صرف آٹھ مخصوص طبی شعبے موجود تھے اور دوسرے شعبوں میں غیرملکی یونیورسٹیوں کے ذریعہ ہماری ضروریات فراہم کی گئی تھی.
صدر مملکت نے کہا کہ آج اسلامی انقلاب کی بدولت 14 ہزار کے بجائے 140 ہزار ڈاکٹر اس ملک میں سرگرم عمل ہیں اور اسلامی انقلاب کی کامیابی سے ایک سال پہلے صرف 600 میڈیکل سائنز طالب علم موجود تھے مگر آج 6100 طالب علم طبی میدان میں تعلیم حاصل کر رہے ہیں.
انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک کی آبادی میں دوگنا سے زائد یعنی 128 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اور 36 سے 82 ملین شخص پہنچ گئی ہے مگر طبی میدان میں ہماری پیشرفت ملک کی آبادی کے اعداد و شمار سے بہت ہی زیادہ ہے.
روحانی نے کہا کہ ہم نے صحیح راستے پر چلے ہیں اور اسلامی انقلاب کے راستے کی وجہ سے ہمارے مقاصد حاصل کئے گئے ہیں.
274*9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@