کوریائی کمپنیاں ایران سے مائع گیس کی خریداری کا از سرنو آغاز کریں گی

تہران، 4 فروری، ارنا - جنوبی کوریا کی دو بڑی کمپنیوں نے رواں ماہ اسلامی جمہوریہ ایران سے مائع گیس کی خریداری کا ازسرنو آغاز کرنے کا فیصلہ کیا ہے.

کوریائی قومی خبررساں ادارے یونہاپ کے مطابق، ایران سے متعلق حالیہ امریکی پابندیوں سے کوریائی کمپنیوں کو استثنی ملنے کے بعد اب کوریائی کمپنیوں نے ایران سے مائع گیس کی دوبارہ خریداری کے لئے اپنی آمادگی کا اظہار کیا ہے.
یونہاپ نیوز ایجنسی نے باخبر ذرائع کے حوالے سے کہا ہے کہ کوریا کی نامور تیل اور توانائی کمپنی ہنڈائی آئل بینک سر جوڑ کر بیٹھ گئی ہیں جس کا مقصد فروری میں ایران سے 20 لاکھ بیرل مائع گیس خریدنا ہے.
یاد رہے کہ گزشتہ سال ستمبر میں امریکی پابندیوں کے بعد مذکورہ کمپنی نے ایران سے مائع گیس کی خریداری کو معطل کیا تھا جس کے بعد اب وہ دوبارہ اپنی سرگرمیوں کا آغاز کرنے کے لئے پُرعزم ہے.
دیگر کوریائی کمپنی نے بھی مختلف ایرانی کمپنیوں کے ساتھ مذاکرات کا آغاز بھی کیا ہے. اس حوالے سے کورین نیوز ایجنسی نے ہانوہائے ٹوٹل کمپنی کے ایک عہدیدار کے حوالے سے کہا کہ یہ کمپنی رواں ماہ ایران سے مائع گیس کی خریدار کا فیصلہ کیا ہے تاہم اس کے مقدار کے حوالے سے کوئی تفصیلات سامنے نہیں آئیں.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ کوریائی کمپنی ایس.کے. ٹریڈنگ انٹرنیشنل نے گزشتہ ماہ ایران سے 20 لاکھ بیرل مائع گیس کی خریدار کی تھی اور اب وہ فروری کے مہینے میں بھی مزید مائع گیس خریدنے کا ارادہ رکھتی ہے.
کوریا سمیت 8 ممالک امریکہ سے استثنی لینے کے واسطے ایران سے تیل کی خریداری کو جاری رکھ سکتے ہیں.
رپورٹ کے مطابق اٹلی، جنوبی کوریا، جاپانا، یونان، ترکی، بھارت، چین اور تائیوان تیل کے شعبے میں ایران کے ساتھ لین دین میں آزاد ہیں.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@