وینزویلا کی قانونی حکومت کی حمایت کرتے ہیں: ایرانی صدر

تہران، 2 فروری، ارنا- ایرانی صدر نے وینزویلا کی قانونی حکومت کی حمایت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ حالیہ صورتحال میں وینزویلا کی قوم اور قانونی حکومت کے درمیان اتحاد انتہائی اہم ہے۔

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر "حسن روحانی" نے مزید کہا کہ وینزویلا کی قوم اور قانونی حکومت ان کے ملک کے خلاف امریکی سازش میں کامیاب ہوکر، واشنگٹن کو وینزویلا کے اندرونی معاملات میں دخل اندازی کی اجازت نہیں دیں گے۔
یہ بات صدر روحانی نے ایران میں تعینات وینزویلا کے نئے سفیر "کارلوس انٹونیو الکا لاکورڈونس" کے ساتھ ایک ملاقات میں کہی- اس موقع پر وینزویلا کے سفیر نے اپنی اسناد تقرری پیش کیں۔
انہوں نے وینزویلا کی قانونی حکومت اور صدر "نکولس ماڈورو" کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہمیں یقین ہے کہ وینزویلا کی قوم، ملک کی قانونی حکومت کے ساتھ مل کر دشمن عناصر سازشوں کو شکست دیں گے۔
صدر روحانی نے وینزویلا کے خلاف امریکہ کی نئی سازش کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ امریکی حکومت بنیادی طور پرخودمختار ممالک اور عوامی انقلابوں کے مخالف ہے لہذا مستقل ممالک اور انقلابوں کی تباہی کے ساتھ دنیا پرغلبہ کرنا چاہتا ہے۔
انہوں نے کہا کہ امریکہ دنیا کی دوسری طاقتوں کو بھی برداشت نہیں کر سکتا ہے مثال کے طور چین، روس اور یورپی ممالک کے ساتھ ان کا رویہ عامرانہ ہے۔
ایرانی صدرنے کہا کہ امریکہ کی جانب سے وینزویلا کی اپوزیش لیڈر کو بطور صدر تسلیم کرنے کا اقدام سخت ناپسند ہے اور یہ امریکی کی جانب سے وینزویلا کی اندرونی معاملات میں مداخلت کا ایک نیا راستہ ہے۔
صدر روحانی تہران اور کراکس کے درمیان اچھے تعلقات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ حالیہ سالوں میں دونوں ممالک کے درمیان مثبت تعلقات قائم تھے جن کا تسلسل صدر ماڈورو کے صدرات کے دوران بھی جاری رہا ۔
انہوں نے دونوں ممالک کے درمیان سیاسی اور اقتصادی شعبوں میں تعلقات کے فروغ پر زور دیا۔
اس موقع پر وینزویلا کے سفیر نے بھی ایران کی جانب سے ان کے ملک کی قانونی حکومت اور قوم کی حمایت کا شکریہ ادا کر تے ہوئے کہا کہ ہم اپنے دوست ممالک بالخصوص ایران کی حمایت کے ساتھ سامراجیت اور دشمن عناصر سازشوں کے خلاف کامیاب ہوں گے۔
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@