پاک ایران تعلقات کی توسیع وقت کی ضرورت ہے: صدر روحانی

تہران، 2 فروری، ارنا - صدر مملکت اسلامی جمہوریہ ایران نے نئی پاکستانی سفیر کے ساتھ ایک ملاقات میں کہا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں توسیع بڑی اہمیت رکھتی ہے اور ان کا فروغ وقت کی ضرورت ہے.

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر ''حسن روحانی'' نے ہفتہ کے روز تہران میں خاتون پاکستانی سفیر ''رفعت مسعود'' کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا.
اس موقع پر نئی پاکستانی سفیر نے ڈاکٹر روحانی کو اپنی اسناد تقرری پیش کیں.
صدر مملکت نے کہا کہ ایران اور پاکستان ایک دوسرے کے برادر، ہمسایہ اور دوست ممالک ہیں جن کے درمیان مختلف شعبوں میں غیرمعمولی تعلقات قائم ہیں.
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ پاک ایران تعلقات کو مزید بڑھانے کے لئے ایک دوسرے کی صلاحیتوں سے استفادہ کرنا ہوگا.
ایرانی صدر نے مزید کہا کہ مختلف شعبوں بالخصوص معاشی لحاظ سے دوطرفہ تعاون کو بڑھانے کے لئے سنہری مواقع موجود ہیں. پاک ایران گیس پائپ لائن دونوں ممالک کے درمیان ایک اہم منصوبہ ہے.
انہوں نے بتایا کہ ہمیں خوشی ہے کہ آئی پی منصوبے پر ایران نے اپنے تمام وعدوں پر عمل کیا ہے اور پائپ لائن کو مشترکہ سرحد تک لایا گیا ہے لہذا ہمیں امید ہے کہ پاکستان بھی اپنے حصے کے کام کا آغاز کرے گا.
ایرانی صدر نے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ پاکستانی حکام پاک ایران گیس پائپ لائن کی تکمیل کے لئے کوششیں کریں گے.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران، پاکستان کی توانائی ضروریات کی فراہمی کے لئے ایک قابل بھروسہ ذریعہ ہے اور اس مقصد سے ہم پاکستان میں بجلی کی فراہمی کے لئے مزید پاور ہاوسز کی تعمیر پر آمادہ ہیں.
ڈاکٹر حسن روحانی نے جنوبی سمندر میں پاک ایران تعاون کی اہمیت کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ چابہار اور گوادر کی صلاحیتوں سے استفادہ کرنا ہوگا کیونکہ یہ دونوں ایک دوسرے کے لئے لازم اور ملزوم ہیں.
انہوں نے پاک ایران سرحد کو امن و دوستی کی سرحد قرار دیتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ مشترکہ سرحدوں کی سلامتی کے لئے مزید کوششیں کرنی ہوں گی.
ایرانی صدر نے اس بات پر زور دیا کہ دہشتگردوں کے ہاتھوں یرغمال باقی کے ایرانی سرحدی اہلکاروں کی بازیابی کو بھی یقینی بنایا جائے.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران، پاکستان اور ترکی خطے میں اقتصادی تعاون تنظیم (ECO) کے بانی ممالک ہیں لہذا علاقائی خوشحالی، معاشی تعاون اور خطی کی سلامتی کے لئے قریبی تعاون کو بڑھانا ہوگا.
اس ملاقات میں خاتون پاکستانی سفیر نے اسلامی انقلاب کی 40ویں سالگرہ پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ایران اور پاکستان کے درمیان تمام تر تعلقات اور تعاون میں مزید اضافہ کرنا ہوگا.
رفعت مسعود نے کہا کہ پاکستانی عوام اور حکومت ایران کو اپنا دوست اور برادر سمجھتے ہیں اور ہمیشہ ایرانیوں کے لئے خاص احترام رکھتے ہیں.
انہوں نے دونوں ممالک کے درمیان مختلف شعبوں میں موجودہ تعلقات بالخصوص پاک ایران گیس پائپ لائن سے متعلق دوطرفہ تعاون پر اطمینان کا اظہار بھی کیا.
پاکستان کی سفیر نے کہا کہ ہمیں اس بات پر خوشی ہے کہ ایران کے ساتھ مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعاون کو بڑھانے کی صلاحیت رکھتے ہیں.
انہوں نے اس بات کی یقین دہانی کرائی ہے کہ پاکستان، ایران کے ساتھ مشترکہ سرحدوں کی سلامتی کے لئے کسی بھی کوشش سے دریغ نہیں کرے گا کیونکہ ہم سمجھتے ہیں کہ سرحدوں کے پُرامن رہنے سے مشترکہ معاشی سرگرمیوں اور عوام کے درمیان رابطوں میں اضافہ ہوگا.
رفعت مسعود نے علاقائی امن و سلامتی کے حوالے سے ایران اور پاکستان کے کردار کو اہم قرار دیتے ہوئے کہا کہ علاقائی سلامتی، عدم استحکام کی روک تھام اور دشتگردوں کے خلاف مشترکہ اقدامات سے دہشتگرد عناصر کے عزائم کو ناکام بنایا جاسکتا ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@