ایران کیلئے یورپ کے مالیاتی میکنزم مثبت قدم ہے: ترکی

انقرہ، 1 فروری، ارنا - ترک وزیر خارجہ نے ایران مخالف امریکی پابندیوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران کے ساتھ تجارت کے لئے یورپ کے مخصوص مالیاتی میکنزم ایک مثبت قدم ہے.

''مولود چاؤش اوغلو'' نے جمعہ کے روز اناطولیا نیوز ایجنسی سے گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ بات چیت اور مذاکرات سے تمام مسائل کا حل ممکن ہے.
انہوں نے کہا کہ امریکی پابندیاں صرف ایران تک محدود نہیں بلکہ یورپی ممالک سے لے کر جاپان تک ان پابندیوں سے متاثر ہوئے.
ترک وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ امریکی پابندیوں کی وجہ سے رونما ہونے والی موجودہ صورتحال میں یورپ کی جانب سے ایران کے لئے مخصوص مالیاتی نظام کا اعلان ایک مثبت قدم ہے.
انہوں نے کہا کہ ترکی کسی بھی ملک کے خلاف پابندیوں کے خلاف ہے اور ہم امریکہ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ایران مخالف پابندیوں پر نظرثانی کرے.
مولود چاؤش اوغلو نے مزید بتایا کہ ایران کے خلاف امریکہ کی یکطرفہ پابندیوں سے کچھ حاصل نہیں ہوگا.
یاد رہے کہ رومانیہ میں یورپی یونین کے وزارتی اجلاس کے موقع پر جرمنی، برطانیہ اور فرانس کے وزرائے خارجہ نے ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں ایران کے لئے مخصوص مالیاتی نظام کے اجرا کا باضابطہ طور پر اعلان کردیا.
رپورٹ کے مطابق، یورپ کے مخصوص مالیاتی چینل کا مرکزی دفتر پیرس میں ہوگا جسے INSTEX کا نام دیا گیا ہے اور یہ تجارتی تبادلے کے سازوسامان کا مخفف ہے.
تینوں یورپی ممالک انسٹیکس میکنزم کے حصہ دار ہوں گے اور نامور جرمن بینکر اس کی قیادت کریں گے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@