ایران میں یورپی کمپنیوں کی سرگرمیوں کی حمایت کرتے ہیں: آسٹریا

لندن، 1 فروری، ارنا - آسٹرین حکومت نے ایران کیلئے یورپ کے مخصوص مالیاتی نظام کے اعلان کے بعد کہا ہے کہ ہم ایران میں یورپی کمپنیوں کی سرگرمیوں کی حمایت کرتے ہیں.

یہ بات خاتون آسٹرین وزیر خارجہ 'کرین کنیسل' نے کی جو رومانیہ میں یورپی یونین کے وزرائے خارجہ کے اجلاس کے دوران میڈیا سے گفتگو کررہی تھیں.
اس موقع پر انہوں نے ایران میں یورپی کمپنیوں کی شراکت داری اور ایران کے ساتھ تجارت میں سہولت کاری کی حمایت کا اعلان کیا.
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ہمیں ایران میں یورپ کی چھوٹی اور درمیانی کمپنیوں کی سرگرمیوں کے لئے سازگار ماحول فراہم کرنا ہوگا اور پابندیوں کی وجہ سے بینکاری سہولت نہ ملنے پر دیگر کمپنیوں کی عدم موجودگی کو بھی روکنا ہوگا.
کرین کنیسل نے مزید کہا کہ ہم اس وقت چھوٹی تجارت کی بات کررہے ہیں جبکہ یورپ کے نئے میکنزم انسٹیکس بڑی کمپنیوں کے لئے موزون نہیں، اس وقت ایران کی آٹومٹو صنعت اور توانائی کے شعبے میں یورپی کمپنیوں کی جگہ پر چینی کمپنیاں سرگرم ہیں اور وہ ایرانی مارکیٹ میں بڑے پیمانے پر تعاون کررہی ہیں.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ رومانیہ میں یورپی یونین کے وزارتی اجلاس کے بعد جرمنی، برطانیہ اور فرانس کے وزرائے خارجہ نے ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں ایران کے لئے مخصوص مالیاتی نظام کے اجرا کا باضابطہ طور پر اعلان کردیا.
رپورٹ کے مطابق، یورپ کے مخصوص مالیاتی چینل کا مرکزی دفتر پیرس میں ہوگا جسے INSTEX کا نام دیا گیا ہے اور یہ تجارتی تبادلے کے سازوسامان کا مخفف ہے.
تینوں یورپی ممالک انسٹیکس میکنزم کے حصہ دار ہوں گے اور نامور جرمن بینکر اس کی قیادت کریں گے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@