یورپ نے امریکی پابندیوں کو بائی پاس کرکے ٹرمپ کو طمانچہ مارا: اطالوی اخبار

روم، 1 فروری، ارنا - اٹلی کے ایک اخبار نے کہا ہے کہ یورپی یونین نے مخصوص مالیاتی میکنزم کے ذریعے ایران مخالف امریکی پابندیوں کو بائی پاس کیا جو ڈونلڈ ٹرمپ کے منہ پر طمانچہ ہے.

اطالوی نیوز ویب سائیٹ europa today کے مطابق، امریکہ نے جوہری معاہدے سے نکل کر ایران پر پابندیاں عائد کیں مگر تین یورپی ممالک فرانس، برطانیہ اور جرمنی نے ایران سے متعلق مخصوص مالیاتی میکنزم کو تیار کرکے ٹرمپ کے منہ پر طمانچہ دے مارا.
اخبار نے مزید کہا کہ تین یورپی ممالک نے اس میکنزم کی مدد سے ایران میں یورپی کمپنیوں کی سرگرمیاں جاری رکھنے کو یقینی بنایا.
اطالوی اخبار کے مطابق، اگر ٹرمپ انتظامیہ ایران سے متعلق پابندیوں کو مزید دشورا بنانا چاہتی ہے تو وہ آزاد ہے مگر یورپ ایران کے ساتھ لین دین جاری رکھنے کا خواہاں ہے اور جوہری معاہدے سے متعلق اپنے وعدوں کی پاسداری کرنا چاہتا ہے.
یورپا ٹوڈے ویب سائیٹ نے مزید کہا کہ فرانس، جرمنی اور برطانیہ نے ایران کے ساتھ مالیاتی لین دین کو آسان بنانے کے لئے مخصوص میکنزم کے باضابطہ اجرا کا اعلان کردیا ہے جس کے ذریعے سے یورپی کمپنیوں کو امریکی پابندیوں سے چھٹکارا ملے گا.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ رومانیہ میں یورپی یونین کے وزارتی اجلاس کے بعد جرمنی، برطانیہ اور فرانس کے وزرائے خارجہ نے ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں ایران کے لئے مخصوص مالیاتی نظام کے اجرا کا باضابطہ طور پر اعلان کردیا.
رپورٹ کے مطابق، یورپ کے مخصوص مالیاتی چینل کا مرکزی دفتر پیرس میں ہوگا جسے INSTEX کا نام دیا گیا ہے اور یہ تجارتی تبادلے کے سازوسامان کا مخفف ہے.
تینوں یورپی ممالک انسٹیکس میکنزم کے حصہ دار ہوں گے اور نامور جرمن بینکر اس کی قیادت کریں گے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@