مغرینی کا ایران کیلئے یورپی مالیاتی نظام کے نفاذ کا خیر مقدم

تہران، 31 جنوری، ارنا- یورپی یونین کی چیف خارجہ پالیسی نے کہا ہے کہ فرانس، جرمن اور برطانیہ کی جانب سے ایران کیلئے یورپ کے مخصوص مالیاتی میکنزم کے نفاذ کا اگلے چند گھنٹوں تک باقاعدہ طور پر اعلان کردیا جائے گا جس کے بعد وہ ایک بیان کے ذریعے اس کی مضبوط حمایت کریں گی۔

یہ بات "فیڈریکا مغرینی" نے رومانیہ کے دارلحکومت بخارسٹ میں یورپی یونین کے وزارئے خارجہ کے اجلاس کے آغاز سے پہلے کہی۔
انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال کے ستمبر مہینے میں اقوام متحدہ کے اجلاس کے موقع پر ایران جوہری معاہدے کے مکمل نفاذ کیلئے ایس پی وی نظام کے قیام کا فیصلہ کیا گیا۔
مغرینی نے کہا کہ یورپی یونین ایران جوہری معاہدے کے مکمل نفاذ کی حمایت کرتا ہے-
یورپی یونین کی چیف خارجہ پالیسی نے کہا کہ بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کی مسلسل 13 رپورٹوں کے مطابق ایران نے اب تک جوہری معاہدے سے متعلق اپنے کیے گئے وعدوں پر شفافیت کے ساتھ عمل کیا ہے اور ہمارا یقین ہے کہ یہ خطی سلامتی کیلئے ایک اہم اور کلیدی دستاویز ہے۔
انہوں نے کہا کہ ایس پی وی نظام کے ذریعے ایران یورپ تجارتی لین دین کا سلسلہ قانونی طور پر جاری رکھے گا۔
انہوں نے کہا کہ مخصوص مالیاتی نظام کے نفاذ اور دیگر علاقائی مسائل کے حوالے سے امریکی حکام کے ساتھ مذاکرات کا سلسلہ جاری ہے۔
مغرینی نے امریکی وزیر خارجہ "مائیک پمپئو" کے ساتھ اپنے حالیہ ٹیلی فونک رابطے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ایس پی وی نظام کے نفاذ میں کوئی خطرہ در پیش نہیں ہے۔
یاد رہے کہ گزشتہ سال مئی میں ایران جوہری معاہدے سے امریکہ کی غیرقانونی علیحدگی کے بعد، یورپی یونین نے اس کے خلاف مؤقف اپنایا اور اس نے ایران کے ساتھ تجارت کو جاری رکھنے کے لئے موثر طریقہ اپنانے کا اعلان کر رکھا-
مخصوص مالیاتی میکنزم کے تحت جسے مختصر حرفوں میں SPV کہا جاتا ہے، ایران کے مرکزی بینک اور یورپی ممالک کے درمیان براہ راست تعاون قائم ہوگا جس کی مدد سے بینکاری اور تجارت سے متعلق مشترکہ سرگرمیوں کو ضمانت ملے گی۔
معروف امریکی اخبار وال سٹریٹ جرنل نے گزشتہ دنوں یورپی یونین کے باخبر ذرائع کے حوالے سے کہا تھا کہ ایران کے یورپ کے مخصوص مالیاتی نظام SPV کا نفاذ حتمی مرحلے میں داخل ہوچکا ہے اور اس کا باضابطہ اعلان جمعرات یا جمعہ کے روز ہوگا-
آج بروز جمعرات جرمنی کے نیوز چینل 'این ڈی آر' نے کہا ہے کہ یورپی یونین کی جانب سے ایران سے متعلق مخصوص مالیاتی نظام کو باقاعدہ طور پر نافذ کردیا گیا ہے
رپورٹ کے مطابق، موجودہ مالیاتی میکنزم جس کا عنوان INSTEX ہے، کے ذریعے ایران سے متعلق امریکی پابندیوں کو بائی پاس کرنا ہے-
تفصیلات کے مطابق اس مالیاتی میکنزم کا قیام فرانس کے دارلحکومت پیرس میں ہوگا اور جرمن کے ایک ممتاز بینکر اس کے سربراہ کے طور پر مقرر کردیا گیا ہے برطانیہ بھی نگران بورڈ کا چیئرمین ہے جبکہ ہر یک ممالک کی محکمہ خارجہ سے بھی ایک نمائندہ اس میں شامل ہوں گے۔
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@