ایران جوہری معاہدہ: یورپ سے عملی اقدامات کی توقع رکھتے ہیں: عراقچی

تہران، 31 جنوری، ارنا - نائب ایرانی وزیرخارجہ نے کہا ہے کہ ہم جوہری معاہدے سے متعلق یورپی ممالک سے صرف زبانی جمع خرچ نہیں بلکہ عملی اقدامات اٹھانے کی توقع رکھتے ہیں.

یہ بات ''سید عباس عراقچی'' نے دورہ بلغاریہ کے موقع پر کہی جہاں وہ دوطرفہ سیاسی مشاورت کے لئے 'صوفیہ' پہنچے ہیں.
ایرانی وزیرخارجہ کے معاون خصوصی نے یورپی پارلیمنٹ میں بلغاریہ کے نمائندے کے ساتھ ایک ملاقات میں کہا کہ ہم جوہری معاہدے کی حمایت میں یورپ کے سیاسی مؤقف کے شکرگزار ہیں مگر ہم یورپی ممالک سے عملی اقدامات کے خواہاں بھی ہیں.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران جوہری معاہدہ امریکی پالیسی کی وجہ سے خطرے میں ہے، ایران اپنے وعدوں کی پابندی کررہا ہے جس کی تصدیق عالمی جوہری معاہدے نے بھی بارہا کی ہے.
سید عباس عراقچی نے وارسا کانفرنس سے متعلق کہا کہ امریکہ جب اقوام متحدہ میں ایران مخالف اپنے مقاصد حاصل کرنے میں ناکام رہے تو اب وہ کوشش کررہا ہے کہ اقوام متحدہ کے باہر ایران مخالف اتحاد تشکیل دے تاہم یورپی ممالک کو ایسے اقدامات سے ہوشیار رہنا ہوگا.
اس ملاقات میں بلغایہ کے نمائندے کا کہنا تھا کہ یورپی مفادات کے پیش نظر ایران جوہری معاہدے کا تحفظ کرنا ہوگا.
انہوں نے کہا کہ ایران خطے میں ایک مستحکم ملک ہے لہذا جوہری معاہدے کی حمایت کے سلسلے کو جاری رکھنا ہوگا.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@