دہشت گردی کے خلاف حتمی فتح تک شام کیساتھ کھڑے رہیں گے: نائب ایرانی صدر

تہران، 29 جنوری، ارنا- سنیئر نائب ایرانی صدر نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے حکومت اور عوام، دہشت گردی کے خلاف حتمی فتح تک شامی حکومت اور عوام کے ساتھ کھڑے رہیں گے۔

یہ بات "اسحاق جہانگیری" نے شامی وزیر خارجہ "ولید المعلم" کے ساتھ ایک ملاقات میں کہی۔
انہون نے کہا کہ خطے کی صورتحال اورعلاقائی تبدیلیاں، اس بات کی نشاندہی کر رہی رہیں کہ شام، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں کامیاب ہوگیا ہے۔
نائب ایرانی صدر نے کہا کہ وہ دہشت گرد گروپ جو تشدد، قتل اور لوٹ مار کے سوا کچھ نہیں جانتے تھے، شامی حکومت اورعوام کے درمیان یکجہتی اور مناسب حکمت عملی سے موت کے گھاٹ اتار دیے گئے اور یہ تاریخ کا بہت بڑا سبق ہے۔
انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف شامی حکومت اورعوام کی کامیابیوں سے شام کے اتحادی ممالک خوش اور دشمن عناصر غصے میں آگئے اور اس کی ایک کھلی نشان، شام پر صہیونیوں کی جارحیت تھی جبکہ دوسری طرف امریکہ کو بھی پتہ چل گیا کہ خطے میں ان کی موجودگی کی بدولت امریکی حکومت کو شکست اور ہزیمت کا سامنا کرنا پڑا ہے۔
جہانگیری نے کہا کہ امریکی پالیسیاں خطے میں شکست کھانے کی بدولت، امریکی حکومت دوسروں پر اقتصادی دباؤ ڈالنے اورمزید پابندیاں لگانے کے درپے ہے تا کہ جنگ میں عدم کامیابی کو سیاسی طریقوں سے کامیابی میں بدل کرے لہذا ہمیں ایک دوسرے کیساتھ مل کر تعمیری تعاون کے ذریعے امریکہ کو اپنے ان منصوبوں پرعملی جامہ پہنانے کی اجازت نہیں دینی چاہیے۔
نائب ایرانی صدر نے آستانہ مذاکرات کے فریم ورک کے اندر اور چند فریقی مذاکرات کے ذریعے شامی مسئلہ کے حل پر زور دیتے ہوئے کہا شام کی تعمیر نو میں کی جانے والے کوششون کو ٹھوس بنانے کی ضرورت ہے اور اسلامی جمہوریہ ایران اس مہم حاصل کرنے کیلئےشامی حکومت اور عوام کے ساتھ تعاون پرتیار ہے۔۔
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@