آزادانہ تجارتی معاہدہ: پاک ایران مذاکرات آئندہ ماہ متوقع

اسلام آباد، 29 جنوری، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران اور پاکستان کے درمیان آزادانہ تجارتی معاہدے (FTA) پر آئندہ ماہ مذاکرات متوقع ہیں.

پاکستان کے انگریزی اخبار 'بزنس ریکارڈ' نے باخبر ذرائع کے حوالے سے کہا ہے کہ ایران اور پاکستان بینکاری شعبے کو درپیش مسائل کے حل کے لئے فروری کے دوسرے ہفتے میں آزادانہ تجارتی معاہدے پر مزید مذاکرات کرنے والے ہیں.
رپورٹ کے مطابق، آئندہ مذاکرات کا اصل مقصد پاک ایران بینکاری چینل میں موجود رکاوٹوں کا خاتمہ کرنا ہے.
نومبر 2017 میں تہران کی میزبانی میں دونوں ممالک کے سنیئر حکام پر مشتمل تجارتی مذاکرات کمیٹی کا دو روزہ اجلاس کا انعقاد کیا گیا تھا. پاکستان کے آرمی چیف کے گزشتہ سال دورہ ایران کے بعد تہران حکومت نے پاکستان کے ساتھ تجارت کو مزید بڑھانے میں زیادہ دلچسپی کا اظہار کیا.
سرکاری ذرائع نے اخبار کو بتایا ہے کہ پاکستان ایران سے ایم آر اے معاہدے پر دستخط کرنے کی درخواست کرے گا تا کہ دونوں ممالک ایک دوسرے کی مصنوعات پر مشترکہ معیار نافذ کریں.
اخبار نے مزید بتایا کہ اس معاہدے کے بعد پاکستانی مصنوعات کی نقل و حرکت پر جو مشکلات ہیں وہ دور ہوجائیں گی.
بزنس ریکارڈر کے مطابق، ایران اور پاکستان نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ ایف ٹے اے معاہدے کو جلد سے جلد نافذ کرنے کے حوالے سے اس دوران موجودہ رکاوٹوں کا خاتمہ کردیا جائے.
دونوں ممالک آئندہ مذاکرات میں باہمی تجارت کے اعداد و شمار کا بھی جائزہ لیں گے اور اس حوالے سے معلومات کا تبادلہ بھی کیا جائے گا.
ایک سرکاری ذرائع نے اخبار کو بتایا کہ پاکستان آزادانہ تجارتی معاہدے کو حتمی شکل دینے کے لئے اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ بھرپور تعاون کرے گا.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@