صہیونیوں کی جارحانہ پالیسی خطے میں عدم استحکام کی اصل وجہ ہے: ایران

تہران، 29 جنوری، ارنا - اعلی ایرانی سفارتکار نے کہا ہے کہ ناجائز صہیونی ریاست کی جارحانہ پالیسی مشرق وسطی میں موجودہ عدم استحکام کی اصل وجہ ہے.

یہ بات ''سید عباس عراقچی'' نے دورہ آسٹریا کے موقع پر خاتون وزیر خارجہ ''کرین کنیسل'' کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے مشرق وسطی کے حالات پر تبصرہ کرتے ہوئے مزید بتایا کہ ناجائز صہیونی ریاست کی منفی پالیسیوں سے آج پورا خطہ عدم استحکام کا شکار ہے.
انہوں نے ایران جوہری معاہدے سے متعلق آسٹرین حکومت کے مؤقف کو سراہتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ ایران کے لئے یورپ کے مخصوص مالیاتی میکنزم کا جلد نفاذ ناگزیر ہے جس سے ایران کو معاشی مفادات حاصل ہوں.
فریقین نے اس موقع پر ایران آسٹریا تعلقات، یورپ کے مخصوصی مالیاتی نظام SPV، جوہری معاہدے کے تحفظ کے لئے یورپی کاوشوں کا جائزہ لیا.
انہوں نے مشرق وسطی کی حالیہ صورتحال بشمول شام، فلسطین، لبنان اور یمن سے متعلق بھی تبادلہ خیال کیا.
خاتون آسٹرین وزیر خارجہ نے تہران ویانا تعلقات کی اہمیت کا حوالہ دیتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ مشرق وسطی میں امن و استحکام کے مقاصد کے حصول کے لئے دونوں ممالک کے درمیان سیاسی مشاورت کو جاری رکھنا چاہئے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@