ایرانیوں کی سائنس اور ٹیکنالوجی میں ترقی حیران کن ہے: برطانوی تجزیہ کار

لندن، 28 جنوری، ارنا - سنیئر برطانوی تجزیہ کار کا کہنا ہے کہ اسلامی انقلاب کی فتح کے بعد 40 سالوں میں ایرانیوں کے خلاف دشمنی اور پابندیوں کا نتیجہ سائنس اور ٹیکنالوجی میں ایرانی قوم کی حیران کن ترقی کے سوا کچھ نہیں نکلا.

پروفیسر ''روڈنی شیکسپر'' نے لندن میں ارنا نیوز کے نمائندے سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے مزید بتایا کہ انقلاب کے 40 سال گزرنے کے بعد بھی ایران کے خلاف دشمنی اور پابندیوں سے کوئی نتیجہ نہیں نکلا بلکہ ایرانی قوم نے سائنس اور ٹیکنالوجی میں حیرت انگیز کامیابیاں حاصل کیں.
انہوں نے کہا کہ 1979 میں جب انقلاب آیا تو اس کے وسیع اثرات سامنے آئے اور اس نے ثابت کردیا کہ مغربی سرمایہ دارانہ نظام اور سوویت کمیونزم کے علاوہ بھی کوئی تیسرا راستہ موجود ہے.
سیاسی امور کے برطانوی تجزیہ کار کا کہنا تھا کہ ایران میں انقلاب مذہبی، قومی اور ایک ثقافتی انقلاب کا ایک مجموع ہے جس کی دنیا میں کوئی مثال نہیں دیکھی تھی اسی وجہ سے دنیا حیرانگی کے علاوہ مایوسی کا بھی شکار رہی.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران میں انقلاب کے 40 سال گزرنے کے بعد بھی آج لاکھوں ایرانی انقلاب کی سالگرہ کو بھرپور انداز میں مناتے ہیں بالخصوص 11 فروری کی ریلیوں میں تاریخی شرکت کرتے ہیں.
پروفیسر روڈنی شیکسپر کا کہنا تھا کہ ایران کے آس پاس دنیا کی بدترین ظالم ترین اور جابر ترین حکومتیں ہیں جبکہ آج سعودی عرب کو دوسروں سے زیادہ ایران میں جمہوریت سے خوف ہے.
انہوں نے مزید بتایا کہ دباؤ، پابندیوں اور عراق کی جانب سے آٹھ سالہ مسلط کردہ کے باوجود بھی ایران کی ترقی کا سفر جاری رہا تاہم بعض مشکلات تو ہیں مگر ایران کی ترقی حیران کن ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@