ایران اور ترک وزرائے خارجہ کا وینزویلا کی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال

تہران، 26 جنوری، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران اور ترکی کے وزرائے خارجہ نے ایک ٹیلی فونک رابطے کے دوران لاطینی امریکی ملک وینزویلا کی حالیہ سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا.

'محمد جواد ظریف' نے آج اپنے ترک ہم منصب 'مولود چاوش اوغلو' کے ساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے میں وینزویلا کی تازہ ترین صورتحال سمیت خطی مسائل پر بات چیت کی.
یاد رہے کہ ایرانی وزیر خارجہ نے گزشتہ رات اپنے وینزویلائی ہم منصب "جارج اریزا" کے ساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے میں خودمختار ممالک بالخصوص وینزویلا کے خلاف امریکی سازشوں سے نمٹنے کے لئے عالمی طریقوں پر تبادلہ خیال کیا.
اس کے علاوہ وینزویلا میں حکومت اور باغی گروہوں کے درمیان مذاکرات اور مسائل کے سیاسی حل سے متعلق میکسیکو اور یوراگوئے کی تجاویز کا بھی جائزہ لیا گیا.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی مداخلت سے وینزویلا میں حکومت لڑکھڑانے لگی، دوسری جانب سے اپوزیشن لیڈر خوآن گوآئیڈو نے خود کو صدر قرار دے دیا.
امریکی صدر نے بھی کہا ہے کہ وہ حزب اختلاف کے رہنما کو بطور صدر تسلیم کرتے ہیں. مختلف ممالک نے ٹرمپ کی اس مداخلت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے.
تفصیلات کے مطابق، کم سے کم دنیا کے مختلف ممالک بالخصوص ایران، روس، چین اور ترکی نے وینزویلا کی حکومت اور صدر '' نکولس ماڈورو'' کی حمایت کرتے ہوئے وینزویلا کے اندورنی معاملات میں بیرونی مداخلت کی شدید مذمت کی ہے.9410*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@