ایران، شنگھائی تنظیم کیساتھ تعاون کی توسیع کیلئے پُرعزم

بیجنگ، 24 جنوری، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ ایران شنگھائی تعاون تنظیم (SCO) کے تمام رکن ممالک بالخصوص چین کے ساتھ مشترکہ تعاون کو مزید بڑھانے کا خواہاں ہے.

یہ بات چین میں تعینات ایرانی سفیر ''محمد کشاورز زادہ'' نے گزشتہ روز شنگھائی تعاون تنظیم کے نئے سیکریٹری جنرل کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.
اس موقع پر انہوں نے نئے سیکریٹری جنرل کو ایرانی وزیرخارجہ محمد جواد ظریف کا پیغام دے دیا جس میں انہوں نے ''ولادیمیر نوراوف'' کو مبارکباد پیش کی ہے.
ایرانی سفیر نے اس امید کا اظہار کیا کہ ولادیمیر نور اوف کے دور میں اسلامی جمہوریہ ایران اور شنگھائی تنظیم کے درمیان مختلف شعبوں میں باہمی تعاون میں مزید اضافہ ہوگا.
انہوں نے ایران کے خلاف امریکی انتظامیہ کے منفی اقدامات بالخصوص ایران چین تعلقات میں خلل ڈالنے کے لئے ڈونلڈ ٹرمپ کے مضموم عزائم کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ایران چین قیادت اور دونوں ممالک کے عوام ان رکاوٹوں کے خاتمے کے لئے پُرعزم ہیں جس کا مقصد دوطرفہ تاریخی تعلقات کو مزید مضبوط بنانا ہے.
محمد کشاورز زادہ نے شنگھائی تنظیم میں ایران کو مستقل رکنیت دینے کے عمل کو طول ملنے پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایران انسداد دہشتگردی، منشیات اور جرائم کی روک تھام، نقل و حمل اور مختلف تجارتی اور معاشی شعبوں میں اچھے تجربات رکھتا ہے لہذا ہمیں امید ہے کہ شنگھائی تنظیم میں ہماری مستقل رکنیت کی درخواست کو جلد منظور کرلیا جائے گا.
اس ملاقات میں سیکریٹری جنرل شنگھائی تعاون تنظیم نے اسلامی جمہوریہ ایران کی پوزیشن اور اس کے تعاون کی اہمیت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ایران اور شنگھائی تنظیم کے رکن ممالک کے درمیان تاریخی تعلقات ہیں اور ہم اس تنظیم کے ساتھ مل ایک موثر میکنزم پر کام کررہے ہیں جس کے تحت مبصر ممبران کے ساتھ باہمی تعلقات کو مزید فروغ دیا جائے گا.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@